اسرائیل نے فلسطینی چینل کودہشت گرد قرار دے کر پابندی لگا دی

112
غزہ: اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والے سیف الدین ابوزید کو آخری آرام گاہ لے جایا جارہا ہے

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو نے فلسطین کے الاقصیٰ ٹی وی چینل کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کے بعد اس پر پابندی عاید کردی ہے۔ اسرائیل کے عبرانی اخبار یدیعوت احرونوت کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم نیتن یاہو نے انٹیلی جنس ادارے شاباک اور کمیٹی برائے انسداد معاشی دہشت گردی کی سفارش پر الاقصیٰ ٹیلی وژن چینل کو ممنوع تنظیم قرار دے پر اس پر پابندی عاید کردی ہے۔ صہیونی حکام کی طرف سے وزیراعظم کو پیش کی گئی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ فلسطینی تنظیم حماس الاقصیٰ ٹی وی چینل کو استعمال کرکے عوام میں اپنے ہمدرد پیدا کرنے اور تنظیم میں نئی بھرتیوں کے لیے سرگرم ہے۔ یہ چینل ایک ایسے گروپ کے ساتھ منسلک ہے جسے اسرائیل دہشت گرد قرار دیتا ہے۔دوسری جانب فلسطین کے عوامی، سیاسی اور ابلاغی حلقوں نے اسرائیلی فیصلے کو ابلاغی دہشت گردی قرار دیتے ہوئے اپنے مظالم پر پردہ ڈالنے کی مذموم کوشش قرار دیا ہے۔