کوہستان ویڈیو اسکینڈل کا مدعی افضل کوہستانی قتل

131
افضل کوہستانی
افضل کوہستانی کی فائل فوٹو

کوہستان ویڈیو اسکینڈل میں غیرت کے نام پر قتل ہونے والی پانچ لڑکیوں کا مقدمہ درج کرنے والے افضل کوھستانی کو نامعلوم افراد نے ایبٹ آباد میں گولیاں مار کر قتل کر دیا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ بدھ کی رات ساڑھے آٹھ بجے شاہراہ قراقرم پر واقع گامی اڈے کے مقام پر 3 افراد نے کلاشنکوف سے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں افضل کوہستانی موقع پر ہلاک ہوگئے۔

پولیس ذرائع کے مطابق فائرنگ کے نتیجے میں تین راہگیر بھی زخمی ہوئے۔

افضل کوہستانی کی میت کو پوسٹ مارٹم کے لئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال لے جایا گیا جبکہ دیگر تین زخمی راہگیروں کو ایوب میڈیکل کمپلیکس میں طبی امداد کے لیے شفٹ کر دیا گیا ہے۔

ایبٹ آباد تھانہ کینٹ پولیس کی جانب سے قتل میں ملوث کچھ لوگوں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے تاہم اس کی تفصیلات جاری نہیں کی گئیں۔ ذرائع کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں افضل کوہستانی کا ایک رشتہ دار بھی شامل ہے۔

واضح رہے کہ افضل کوہستانی کی جانب سے اپنی زندگی کو لاحق خطرات کے بارے میں خیبرپختونخوا پولیس کو متعدد بار آگاہ کیا جا چکا تھا۔

حرا زرین شعبہ ابلاغ عامہ جامعہ کراچی کی فارغ التحصیل طالبہ ہیں اور عملی صحافت میں قدم رکھ رہی ہیں۔ شاعری اور ادب سے لگاؤ رکھتی ہیں۔