مزدور قومی دفاعی کیلیے فوج کے شانہ بشانہ ہیں

504

بھارت کی فضائیہ نے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی جس پر پاکستانی فضائیہ نے دو بھارتی طیارے مار گرائے۔ ایک پائلٹ گرفتار کرلیا۔ اس موقع پر جسارت لیبر فورم کا سروے آپ کی خدمت میں پیش کیا جارہا ہے۔
شمس الرحمن سواتی
نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان کے صدر شمس الرحمان سواتی نے بھارتی جنگی طیاروں کی جانب سے پاکستان کی فضائی خلاف ورزی کرنے پر کہا ہے کہ بھارت رات کے اندھیرے میں پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کر کے پاکستان کو مشتعل کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محنت کش پاک فوج کے شانہ بشانہ بھارت کا مقابلہ کریں گے اور بھارت کو سبق سکھایا جائے گا ۔انھوں نے کہا کہ بھارت کا جنگی جنون دنیا کے امن کو تباہ کردے گا۔ایک جانب نہتے کشمیریوں پر بدترین مظالم ڈھا کر بھارت نے ظلم کی انتہاکی ہوئی ہے۔ کشمیریوں کا لہو رنگ لائے گا اور کشمیر اب بھارت کے شکنجے سے آزاد ہو گا۔ او آئی سی اور اقوام متحدہ بھارت کو نکیل ڈالے ورنہ پاکستان جواب ایٹمی قوت ہے وہ بھارت کو ایسا سبق سیکھائے گاکہ اس کی نسلیں یاد رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ بالاکوٹ پر فضائی حدود کی خلاف ورزی کے خطرناک نتائج برآمد ہوں گے۔ بھارت نے اپنی ایک ارب عوام کی زندگیاں داو پر لگا دی ہیں۔ پاک فوج آگے بڑھ کر بھارت کو جواب دے اور کراچی سے لے کر خیبر تک کے محنت کش بھارتی فوج کا مقابلہ کرنے کو بے قرار ہیں۔
پاکستان ورکرز کنفیڈریشن
پاکستان اور ہندوستان میں پائیدار امن قائم کرنے کے لیے ضروری ہے کہ مسئلہ کشمیر کو کشمیریوں کی اُمنگوں کے مطابق طے کیا جائے۔ مسئلہ کشمیر کے حل تک اس خطے میں امن کا قیام ممکن نہیں ہے۔ ان خیالات کا اظہار لاہور میں پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شوکت علی چودھری، فضل واحد، محمد یعقوب اور چودھری نسیم اقبال نے کیا۔ انہوں نے کہا کشمیر پر جابرانہ طور پر بھارت کے قبضہ رکھنے کے جنون نے اس خطے کے امن کو پچھلے 70 سال سے خطرے میں ڈالا ہوا ہے اور اب تک اس کی وجہ سے جتنا خون بہا ہے اس کی ذمہ داری بھارتی قیادت پر عائد ہوتی ہے۔انہوں نے کہا ابھی وقت ہے کہ بھارتی قیادت جنگی جنون کو پروان چڑھانے کے بجائے مسئلہ کشمیر کے پائیدار اور تمام فریقین کے لیے قابل قبول حل کے لیے مزاکرات کا آغاز کرے۔ انہوں نے کہا یہ بہت خوش آئند ہے کہ اس وقت پورا پاکستان یک زبان ہو کر بھارتی جارحیت کے خلاف متحد ہے۔ پاکستان کے محنت کش بھی اس سلسلے میں متحد اور منظم ہیں اور پاکستان کی حفاظت اور سلامتی کے لیے ہر قربانی دینے کو تیار ہیں۔
خالد محمود چودھری
پریم یونین کے مرکزی رہنماخالد محمود چودھری نے کہا ہے کہ پاک فوج کے جوانوں نے دو طیارے گرا کر بھارت کو واضح کردیا ہے کہ آئندہ بھی اگر کوئی ایسی جرأت کی تو اس سے بھی سخت جواب دیا جائے گا۔ بھارت نے جنگ مسلط کرنے کوشش کی تو اس کا نام صفحہ ہستی سے مٹ جائے گا۔ پاکستان کے بائیس کروڑ عوام اپنی فوج کے ساتھ ہیں۔ بھارت کے اگلے پچھلے تمام حساب بے باک کر دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج نے بھارت کو سرپرائز دے کر پوری قوم کا سرفخر سے بلند کر دیا ہے،ہماری بہادر افواج نے ثابت کردیا ہے کہ ہم دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے ہر وقت تیار ہیں ، بھارت کسی غلط فہمی میں نہ رہے، دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے پوری قوم سیاسی اختلافات بھلا کر پاک فوج کی پشت پر ہے، بطور قوم ہم ایک ہیں۔ بھارتی جارحیت سے خوف زدہ نہیں ،بچہ بچہ وطن کی حرمت پر کٹ مرنے کو تیارہے،وقت آنے پر پوری قوم سیسہ پلائی دیوار ثابت ہوگی، ہم ایک پر امن قوم ہیں مگر اسے ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا اگر پاکستان اور بھارت کے درمیان جنگ روکنا چاہتی ہے تو اسے کشمیر کا مسئلہ حل کرنا ہو گا۔ مودی انتخابات میں شکست سے بچنے کے لیے پاکستان پر جنگ مسلط کرناچاہتا ہے۔ انڈیا کو وہ سبق سکھائیں گے کہ وہ کبھی پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھنے کی جرأت نہیں کرے گا۔
ارشد محمود
مزدور رہنما ارشد محمود نے ایک بیان میں کہا ہے کہ رات کے اندھیرے میں بھارت کا بزدلانہ حملہ دنیا کے امن کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے۔ انڈیا میں جب الیکشن کا موسم آتا ہے تو حکمران طبقہ جو حکومت میں ہوتا ہے اس کی خواہش ہوتی ہے کہ اپنے اقتدار کو دوائم بخشنے اور اپنے اقتدار کو طول دینے کی غرض سے چانکیہ کی سوچ کے مطابق اپنے پڑوسی کو دشمن کے طور پر اپنے ووٹرز کے سامنے پیش کرتا ہے تا کہ وہ ووٹرز کی ہمدردیاں سمیٹ کر اپنے اقتدار کو طول دے سکے اور کمال مہارت کا مظاہرہ وہ اس طرح سے کرتا ہے کہ وہ اپنے دشمن ہمسایہ کے جملہ ہمسائیوں کو اپنا دوست بناتا ہے جیسا کہ وہ آج کل افغانستان اور ایران سے دوستی کی پینگیں بڑھا رہا ہے اور یہی سوچ معروف ہندو فلسفی چانکیہ کی تھی۔ پاکستان کے شاہینوں نے بزدل ہندو کے مکار وار کو نہ صرف پسپا کیا بلکہ اُنہیں نشان عبرت بنا کے رکھ دیا۔ پاکستان کے شیر دل جوانوں نے نہ صرف انڈین ہوائی جہازوں کو گرایا بلکہ انڈیا کی ایئر فورس کے پائلٹ کو بھی زندہ گرفتار کیا۔ موجودہ قیادت نے کمال جرأت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی شاندار روایت کے مطابق دشمن کے پائلٹ کو بھی رہا کرنے کا اعلان کیا جو ہماری شاندار اسلامی روایات کا آئینہ دار ہے۔
ہما ناز
پاکستان ورکرز فیڈریشن کی رہنما ہما ناز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ہم پرامن قوم ہیں اور ایٹمی تباہ کاریوں سے ہر ممکن بچنا چاہتے ہیں اور ملک و قوم کو تباہی کے راستے پر نہیں دیکھنا چاہتے۔ یہ جدوجہد صرف امن وامان برقرار رکھنے کے لیے ہے ورنہ ہم کمزور قوم نہیں، ہم پاکستانی بہت اچھی طرح اپنے ملک کی حفاظت کرنا اور دشمن کو منہ توڑ جواب دینا جانتے ہیں، ہم ملک و ملت کی فلاح وبہبود اور امن وامان کے لیے جان دینا اور لینا بھی جانتے ہیں، ملک کے لیے ہماری جان حاضر ہے۔ پاک فوج، ایئرفورس اور پوری مملکت خداداد پاکستان کو مبارک باد اور سلام پیش کرتی ہوں۔
محمد عمران قمر
کراچی یونیورسٹی سے محمد عمران قمر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو پاکستانی ایئرفورس نے عزت و ہمدردی دے کر پوری دنیا کو یہ پیغام دے دیا ہے کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے، پاکستان کوئی دہشت گرد ملک نہیں ہے، پاکستان اور پاکستانی عوام جنگ سے نہیں ڈرتی بلکہ دونوں ملکوں میں جنگ کے دوران ہونے والی تباہی کو روکنا چاہتا ہے۔ پاکستان معاملات کو مفاہمت سے حل کرنا چاہتا ہے، بھارت میں 40 فیصد آبادی مسلمانوں کی ہے اور اگر جنگ ہوئی تو ظاہر سی بات ہے کہ وہ بھی اس جنگ سے متاثر ہوں گے۔ جبکہ ہمارا مذہب اسلام ہمیں اس بات کی تاکید کرتا ہے کہ ایک مسلمان پر دوسرے مسلمان کا خون حرام ہے۔ انڈیا پہلے ہی اتنے مسائل کا شکار ہے، انڈیا کو چاہیے کہ اپنے ملک کے مسائل کو حل کرنے میں توجہ دے اور ہر معاملے میں پاکستان پر الزام تراشی بند کرے، جنگ کوئی مذاق بات نہیں، جنگ سے دونوں ملکوں ہی کو نقصان ہوگا۔
عرفان شیخ
کراچی لیبر فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل محمد عرفان شیخ نے ایک بیان میں بھارتی پائلٹ کی رہائی پر کہا ہے کہ ہمارے حکمرانوں نے ہمیشہ ہمارے فوجی جوانوں کی محنت پر پانی پھیرا اور موجودہ حالات میں بھی انتہائی عجلت میں بغیر کسی مطالبے اور شرائط کے بھارتی پائلٹ کو رہا کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ قبل ازیں بھارت مطالبے کا انتظار کیا جاتا اور پھر بعدازاں باعزت شرائط پر پائلٹ کی رہائی کا فیصلہ کیا جاتا۔ کئی بے گناہ پاکستانی اور کرنل حبیب گزشتہ ڈیڑھ سال سے بھارتی قید میں ہیں اس موقع پر انہیں رہا کروا سکتا تھا جس پر توجہ نہیں دی گئی اور اس عجلت کا نتیجہ یہ نکلا کہ وہ بھارتی میڈیا جس کو جہاز گرنے پر سانپ سونگھ گیا تھا رہائی کے اعلان کے بعد پھر زہر اُگلنے لگ گیا اور وہاں کے صحافی برملا یہ کہہ رہے ہیں کہ پاکستان ڈر گیا اور وزیراعظم پاکستان ڈر کر امن کی بات کررہے ہیں۔
ڈاکٹر شجاع صغیر
ممتاز سماجی اسکالر، دانشور، قائد ہومیوپیتھی ڈاکٹر شجاع صغیر خان، چیئرمین اکرم قریشی، ناہید خان، ڈاکٹر نازیہ اعظم، ڈاکٹر انیلہ قیوم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ مودی سرکار پاکستانی فوج اور قوم کو نہیں جانتے تمہارے پاس قوم ہم سے زیادہ ہے، اسلحہ اور گولہ بارود ہم سے زیادہ ہے مگر تمہارے پاس شوق شہادت اور جہاد اللہ کی طاقت نہیں ہے، جنگ کی حالت میں تمہاری فوج چھٹی لے کر بھاگ جاتی ہے اور ہماری فوج چھٹی ختم کرکے سرحدوں کی حفاظت کے لیے پہنچ جاتی ہے۔ افواج پاکستان قوم کی شان ہے، آن ہے، پاک فضائیہ کے اسکوارڈن لیڈر حسن صدیقی قوم کا غازی اور ہیرو ہے، تم اگر 200 جہاز بھی لے کر آجاؤ گے تو پاک فضائیہ کے شاہین سب کو مار گرائیں گے۔ حسن صدیقی نے ایم ایم عالم کی یاد تازہ کردی۔ پاکستان امن پسند دھرتی ہے ہم اس میں آباد ہر قوم اور مذہب کا احترام کرتے ہیں لیکن جب بات ملک کی سلامتی پر آجائے تو ہر قوم، ہر مذہب، ہر مذہب، ہر سیاسی، ہر سماجی جماعت ایک پیج پر آجاتے ہیں۔
مسرور احمد مسرور
الائیڈ بینک کے مزدور رہنما مسرور احمد نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھارت کا جنگی جنون سر چڑھ کر بول رہا ہے۔ بالاکوٹ میں فضائی دراندازی کا ڈراما رچایا جانا اسی سلسلے کی کڑی ہے۔ مودی حکومت آنے والے انتخابات سے خوفزدہ ہے کیونکہ پانچ ریاستوں میں اُسے شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے اور باقی ریاستوں میں بھی ایسی ہی صورتحال نظر آرہی ہے۔ اس الیکشن کے خوف نے مودی کو جنگی چھیڑ چھاڑ کی جانب متوجہ کیا ہے، لیکن اُس کی پہلی غلطی کا جواب ہمارے شاہینوں نے جس ہمت اور جرأت مندی سے دیا ہے وہ بھارت کے ہوش اُڑانے کے لیے کافی ہے اور یہ بات مودی حکومت کو اچھی طرح جان لینا چاہیے کہ افواج پاکستان اپنی پیشہ ورانہ قابلیت، اعلیٰ اخلاقی تربیت اور جنگی صلاحیتوں سے مالا مال ہے اور وہ اپنے دشمن کے دانت کھٹے کرنے میں دیر نہیں کرے گی۔ جنگیں مسائل کا حل نہیں ہوتیں لیکن اگر بھارت نے ایسی کوئی غلطی کی تو اُسے ہماری افواج کی طرف سے کرارا جواب دیا جائے گا جو اُسے برسوں یاد رہے گا۔ بہتر یہ ہے کہ پاکستانی وزیراعظم کی امن پالیسی کا بھارتی قیادت کی جانب سے خیر مقدم کیا جائے اور مذاکرات کی میز پر بیٹھ کر تمام مسائل کا حل تلاش کیا جائے۔ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے، پاکستانی قیادت الزام تراشی کے بجائے مکالمے و مذاکرات پر یقین رکھتی ہے، پاکستانی قوم امن رواداری ترقی و خوشحالی پر یقین رکھتی ہے اور دوسری جانب بھی ایسے رویے کی خواہاں ہے۔
ایم ایل ایف اور پاکستان مزدور محاذ
متحدہ لیبر فیڈریشن اور پاکستان مزدور محاذ کا مشترکہ اجلاس زیر صدارت چودھری محمد یعقوب منعقد ہوا۔اجلاس میں بھارتی رویے کی بھر پور مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ پاکستان کے عوام اور محنت کش امن پسند ہیں اور امید کرتے ہیں کہ بھارتی حکومت بھی اپنے عوام میں انتہا پسندی کے جذبات کو اُبھارنے کی بجائے کشمیریوں کے حق خود اختیاریت کو تسلیم کرتے ہوئے ان پر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق عمل درآمد کرے۔ انہوں نے کہا کہ ان حالات میں محنت کش حکومت کے ساتھ ہیں۔
شیراز جٹ
پاکستان اسٹیل سی بی اے کے سیکرٹری اطلاعات شیراز جٹ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھارتی کی جانب سے LOC اور سیالکوٹ ورکنگ باؤنڈری کی خلاف ورزی کا سلسلہ طویل عرصے سے جاری تھا مودی حکومت اپنی سیاسی و معاشی ناکامیوں کو چھپانے اور پاکستان اور مسلمان دشمنی کو اپنی سیاسی ساکھ بچانے کے لیے استعمال کررہا ہے پاکستان کی عسکری اور سیاسی قیادت نے امن بر قرار رکھنے کے لیے ہمیشہ صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا لیکن پلو امہ بم پلاسٹ کو بہانہ بناتے ہوئے مودی سرکار جس جارحیت کو جاری رکھے ہوئے تھی، مسلسل سرحدی خلاف ورزیاں کررہی تھی اس کا موثر جواب دیا جانا ضرور تھا عمران خان کی قیادت میں ایک بار پھر امن قائم رکھنے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن اگر بھارت سرکار امن کی زبان نہیں سمجھتی تو پوری قوم سیاسی اور عسکری قیادت کے دست و بازو بن کر بھارت کو مثالی سبق سکھا دیں گے۔
سبزی منڈی کے مزدوروں کا مظاہرہ
مزدور رہنما وکیل خان اور دیگر رہنماؤں کی قیادت میں بھارتی جارحیت کے خلاف سبزی منڈی کے مزدوروں نے سپر ہائی وے پر قایم سبزی منڈی مظاہرہ کیا۔