بھارتی پروفیسر کو عمران خان کی تعریف کرنا مہنگی پڑ گئی

75

وجے پور:  بھارتی پروفیسر کی جانب سے  پائلٹ کو  رہا کرنے کے وزیر اعظم عمران خان کے اقدام کو سہرانے  پروفیسر کو طلبہ نے  کو گھٹنوں کے بل بیٹھ کر معافی مانگنے پر مجبور کردیا۔

انتہا پسند ہندوؤں نے اپنے اساد تک  کو  بھی نہ بخشہ ،بھارتی ریاست کرناٹک کے شہر وجے پور میں موقیم انجینئرنگ کالج کے پروفیسر سندیپ وتھار نے سوشل میڈیا پر حالیہ صورت حال پر مودی سرکار کو تنقید کو نشانہ بنایا تھا اور پائلٹ ابھی نندن کی رہائی پر عمران خان کی تعریف کی تھی۔جس پر  پروفیسر کو انتہاپسند ہندوؤں کی طلبہ تنظیم کے غنڈوں نے استاد کو گھٹنوں کے بل بیٹھ کر معافی مانگنے پر مجبور کردیا  جب کہ پروفیسر کی معطلی پر بھی  زور دیا جارہا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق سیکڑوں ہندو انتہا پسند طلبہ تنظیم نے استاد کے اس رویے کے نتیجے میں  پروفیسر سندیپ وتھار کو گھیرے میں لے لیا اور ان کو  زبردستی گھٹنوں پر بیٹھ کر معافی مانگنے کا کہا جس پر پروفیسر ہاتھ جوڑ کر معافی مانگتے رہے۔