سراج الحق آج حسن اسکوائر پر یکجہتی کشمیر کانفرنس سے خطاب کرینگے

81
سراج الحق آج حسن اسکوائر پر یکجہتی کشمیر کانفرنس سے خطاب کرینگے
سراج الحق آج حسن اسکوائر پر یکجہتی کشمیر کانفرنس سے خطاب کرینگے

کراچی(اسٹاف رپورٹر)یومِ یکجہتی کشمیر کے موقع پر جماعت اسلامی کے تحت آج 3بجے دن حسن اسکوائر پر عظیم الشان ’’یکجہتی کشمیرکانفرنس‘‘ منعقد ہو گی ۔ کانفرنس کے انتظامات اور تیاریوں کوحتمی شکل دے دی گئی ہے ۔ کانفرنس میں شہر بھر سے خواتین ، بچے ، بزرگ ، نوجوان، وکلا ، تاجر ، ڈاکٹرز ، انجینئرز ، علما کرام ، اساتذہ ، طلبہ ، محنت کش و مزدوروں سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ افراد کثیر تعداد میں شریک ہوں گے اور اہل کراچی کی جانب سے مظلوم اور نہتے کشمیری عوام کے ساتھ بھر پور اظہار یکجہتی کیا جائے گا ۔ شرکا شہر کے مختلف علاقوں سے جلوسوں اور ریلیوں کی شکل میں حسن اسکوائر پہنچیں گے ۔ شہر کے اہم پبلک مقامات ، بڑی شاہراہوں اور چورنگیوں پر درجنوں کی تعداد میں لگائے گئے کیمپ پیر کے روز بھی رات گئے تک لگے رہے جن پر کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کے ترانے اور نظمیں سنائی جاتی ر ہیں جبکہ کارکنان اور مقامی ذمے داران نے پبلک ٹرانسپورٹ اور پرائیویٹ گاڑیوں میں سفر کر نے والوں میں ہینڈ بلز تقسیم کیے اور شہریوں کو کشمیر کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی ۔ کیمپوں پر عوام کا زبردست جوش و خروش دیکھنے میں آیا ۔کیمپوں میں جدو جہد آزادی کشمیر کے حوالے سے دستاویزی وڈیوز دکھائی گئیں اور تصویری نمائشوں کا بھی اہتمام کیا گیا ۔جے آئی یوتھ کے تحت شہر کے مختلف اضلاع اور زونز میں موٹر سائیکل ریلیاں نکالی گئیں ۔ ریلیوں نے مختلف رہائشی علاقوں اور اہم شاہراہوں پر گشت کیا اور مختلف کیمپوں سے ہوتی ہوئی یہ ریلیاں حسن اسکوائر پر قائم مرکزی استقبالیہ کیمپ پہنچیں ۔ جہاں نوجوانوں کی بڑی تعداد رات گئے موجود رہی اور نوجوان پُر جوش نعرے لگاتے رہے ۔ دریں اثنا امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے بیت المکرم مسجد گلشن اقبال ڈسکو بیکری اور کنیز فاطمہ سوسائٹی سمیت دیگر مقامات پر قائم کیمپوں کا دورہ کیا اور کیمپوں پر موجود کارکنان و ذمے داران اور عوام سے ملاقاتیں کیں اور ان کے جوش اور جذبے کو سراہا ۔حافظ نعیم الرحمن نے کراچی کے عوام سے اپیل کی کہ وہ آج یکجہتی کشمیر کانفرنس میں بھر پور شر کت کریں اور 3بجے دن اپنے اہل خانہ کے ہمراہ حسن اسکوائر پہنچیں ۔ کانفرنس اہل کراچی کی جانب سے اہل کشمیر کے ساتھ یکجہتی کا بھر پور مظہر ثابت ہوگی اور پوری دنیا کے لیے پیغام ہو گا کہ پاکستانی عوام تحریک آزادئ کشمیر کی پشت پر ہیں اور ملک کے حکمران خواہ کوئی بھی پالیسی اختیار کریں عوام کشمیریوں کو ہر گز تنہا نہیں چھوڑیں گے ۔
کراچی(اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت سلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے قوم سے اپیل کی ہے کہ بھارتی مظالم اور ریاستی جبر وتشدد کے شکار مظلوم اور نہتے کشمیری مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے لیے آج بھرپور اور منظم طور پر ’’یوم یکجہتی کشمیر ‘‘ منایا جائے تاکہ عالمی سطح پر پوری قوم کی طرف سے یہ پیغام جائے کہ پاکستان کے عوام کشمیریوں کے ساتھ ہیں اور ان کو ہرگز تنہا نہیں چھوڑیں گے ۔ سراج الحق نے کراچی کے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ آج 3بجے دن حسن اسکوائر پر ہونے والی عظیم الشان’’ یکجہتی کشمیر کانفرنس ‘‘ میں بھرپور شرکت کریں۔ مرد وخواتین ، نوجوان بزرگ ، بچے اور مختلف شعبہ زندگی سے وابستہ افراد کانفرنس میں شرکت کرکے اس اہم اور قومی ایشو پر اپنے اتحاد و یکجہتی کا اظہار کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کی شب ’’یکجہتی کشمیر کانفرنس ‘‘ کے سلسلے میں حسن اسکوائر پر لگائے گئے مرکزی استقبالیہ کیمپ سمیت دیگر کیمپوں کے دورے کے موقع پر خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مرکزی کیمپوں پر نوجوانوں سمیت جماعت اسلامی کے کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ کیمپ کا اہتمام جے آئی یوتھ کی جانب سے کیا گیا تھا ۔ اس موقع پر جے آئی یوتھ کے نوجوانوں نے کشمیر کے حوالے سے ٹیبلو پیش کیا۔ سراج الحق نے حسن اسکوائر پر کانفرنس کی تیاریوں اور انتظامات کابھی جائزہ لیا ۔ سراج الحق نے مزید کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں 7 لاکھ سے زائد بھارتی فوج اور پیرا ملٹری فورسز انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہی ہیں ۔ مظلوم و نہتے کشمیریوں پر عرصہ حیات تنگ کردیاہے ۔ ریاستی جبر وتشدد اور مظالم کی انتہا کردی گئی ہے ، ہزاروں کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا جاچکا ہے ، بڑی تعداد میں نوجوان عقوبت خانوں میں قید ہیں ، خواتین کی بے حرمتی کی جارہی ہے ، ان تمام تر مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر اقوام متحدہ ، امریکا اور عالمی طاقتیں مجرمانہ طور پر خاموش ہیں اور درپردہ بھارت کی سرپرستی کی جارہی ہے ، کشمیر کے حوالے سے اقوام متحدہ کی قرارداد موجود ہے جن کے مطابق کشمیریوں کو استصواب رائے کا حق دیا جانا چاہیے مگر آج تک اس قرارداد پر عمل نہیں کیا گیا اور لاکھوں کشمیریوں کو ان کے حق خود ارادیت سے محروم رکھا گیا ہے ۔ اقوام متحدہ اور عالمی برادری مشرقی تیمور اور جنوبی سوڈان کے حوالے سے تو فوراً متحرک ہوجاتی ہے لیکن کشمیریوں کے حق خود ارادیت دلانے میں اپنی ذمے داریوں سے پہلو تہی کرتی ہے اور واضح طور پر دوہرا معیار اپنا رکھا ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ۔ سراج الحق نے کہاکہ کشمیریوں کی جدوجہد تکمیل پاکستان کی جدوجہد ہے ، کشمیری عوام تحفظ و دفاع پاکستان کی جنگ لڑرہے ہیں لیکن افسوس کہ ملک کے حکمران طبقے نے اس اہم اور قومی ایشو کو ہمیشہ نظر اندا زکیا ہے اور حکومتی سطح پر کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کے لیے جو اقدامات اور کوششیں کی جانی چاہیے تھیں وہ نہیں کی گئیں ، سابق حکمرانوں نے عالمی سطح پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے کچھ نہیں کیا اور بد قسمتی سے موجود ہ حکومت بھی سابق حکومتوں کی طرح مسئلہ کشمیر پر عملی طور پر کچھ کرنے اور صرف بیانات دینے سے آگے بڑھنے کے لیے تیار نہیں ہے ، بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒ نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قراردیاتھا اس کی حفاظت کرنا اور اسے دشمن کے شکنجے سے آزادکرانا ایک قومی ذمے داری ہے جس سے پہلو تہی اختیار کرنا قومی جرم ہے ۔
کراچی: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق حسن اسکوائرپر کیمپ کے دورے پر میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں