بھارتی جارحیت سے خواتین زیادہ متاثر ہیں‘سمیحہ راحیل

34
اسلام آباد: جماعت اسلامی کی سابق رکن قومی اسمبلی سمیحہ راحیل قاضی یوم یکجہتی کشمیر سیمینار سے خطاب کررہی ہیں
اسلام آباد: جماعت اسلامی کی سابق رکن قومی اسمبلی سمیحہ راحیل قاضی یوم یکجہتی کشمیر سیمینار سے خطاب کررہی ہیں

اسلام آباد(صباح نیوز) اسلامی نظریاتی کونسل کی رکن اور سابق رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر سمیحہ راحیل قاضی نے نے کہا کہ بھارتی جارحیت سے خواتین سب سے زیادہ متاثر ہیں۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے البصیرہ شعبہ خواتین کے زیراہتمام منعقدہ یوم یکجہتی کشمیر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی گھر کی قیمتی ترین چیز عورت کی ناموس ہے، کشمیر خواتین یہ قیمتی ترین متاع قربان کر رہی ہیں، ایسی خواتین موجود ہیں جن کے شوہر لاپتا ہو چکے ہیں، یہ خواتین اپنے ازدواجی تعلق کے حوالے سے لاعلم ہیں ۔ ہمیں ان تمام مسائل کے لیے انسانی حقوق کے اداروں میں آواز اٹھانے کی ضرورت ہے ۔بھارت کشمیری آبادی کے تناسب کو بدلنے کی کوشش کر رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ قاضی حسین احمد کہا کرتے تھے کہ اگر کشمیر ہمارے پاس نہ ہو تو بھارت کی مرضی ہے کہ وہ ہمیں پانی میں ڈبو دے یا خشک سالی سے مار دے ۔مگرافسوس کی بات ہے کہ ہماری حکومتوں نے کبھی بھی کشمیر پر کوئی مضبوط موقف نہیں اپنایا ہے جبکہ انتہائی افسوسناک ہے کہ بھارتکشمیر کے حوالے سے مستحکم سفارت کاری کا حامل ہے۔آل پارٹیز حریت کانفرنس کی خاتون رہنما شمیم شال نے تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر کی آزادی لائن آف کنٹرول کے خاتمے سے ہی ممکن ہیتحریکیں کافی طویل ہوتی ہیں جس کے لیے آپ کو اپنا سب کچھ قربان کرنا پڑتا ہے ۔