سراج الحق کی فرانسیسی سفیر سے ملاقات کشمیر میں قتل عام روکنے کیلئے کردار ادا کرنے کا مطالبہ

86
اسلام آباد: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق فرانسیسی سفیر مارک بیرٹے سے ملاقات کے بعدانہیں جماعت اسلامی کی یادگاری شیلڈ پیش کررہے ہیں
اسلام آباد: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق فرانسیسی سفیر مارک بیرٹے سے ملاقات کے بعدانہیں جماعت اسلامی کی یادگاری شیلڈ پیش کررہے ہیں

لاہور(نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے پاکستان میں فرانسیسی سفیر مارک بریٹے سے ملاقات کرتے ہوئے کشمیر میں جاری قتل عام رکوانے کے لیے فرانس سے فوری اور مؤثر کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیاہے ۔ فرانسیسی سفارتخانے میں ڈیڑھ گھنٹہ جاری رہنے والی ملاقات میں انہوں نے کہاکہ بھارت کی6 لاکھ سے زیادہ فوج گزشتہ 71 سال سے کشمیری عوام کو بدترین مظالم کا نشانہ بنارہی ہیں ۔ کشمیر میں جاری ظلم و ستم نے کشمیری عوام کی زندگی اجیرن بنارکھی ہے ۔ حقوق انسانی کی عالمی رپورٹس بھی اس کی تصدیق کر رہی ہیں لیکن عالمی برادری نے مکمل خاموشی اختیار کر رکھی ہے ۔ امیر جماعت اسلامی نے کہاکہ اقوام متحدہ کی قرار دادوں میں خود بھارت نے اعتراف کیا کہ کشمیری عوام کو ان کی مرضی کے مطابق اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا موقع دیا جائے گا ۔ بدقسمتی سے آج تک یہ تنازع 2 ایٹمی طاقتوں کے مابین سنگین اختلافات کا باعث بناہواہے ۔سینیٹر سراج الحق نے فرانسیسی سفیر سے امید ظاہر کی کہ ایک مؤثر جمہوری ملک کی حیثیت سے فرانس اس ضمن میں اہم کردار ادا کرے گا ۔ فرانسیسی سفیر نے کشمیر میں ہونے والے جانی و مالی نقصانات پر اظہار افسوس کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ عالمی برادری اور دونوں ملک باہم گفت و شنید کے ذریعے اور تمام تاریخی و قانونی بنیادوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے اس تنازعے کو ختم کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے ۔ انہوں نے جرمنی اور فرانس کے تاریخی تنازعات کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ دونوں ممالک بالآخر تنازع ختم کرنے میں کامیاب ہوئے اس میں پاکستان اور بھارت کے لیے بھی اہم پیغام ہے ۔ ملاقات میں نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان میاں محمد اسلم ، ڈائریکٹر امور خارجہ جماعت اسلامی عبدالغفار عزیز ، خواجہ عابد محموداور فرانسیسی سفارتخانے کے سیاسی امور کے ذمے داران بھی شریک تھے ۔