مقبوضہ کشمیر ،مزید تین کشمیری شہید،کنٹول لائن پر بھارتی فائرنگ سے4 شہری زخمی

68

سرینگر مظفر آباد(آئی این پی،آن لائن)بھارتی فوج کے ہاتھوں مزید تین کشمیری شہید۔جموں کشمیر میں بھارتی فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران تین نوجوان شہید کر دیے۔ ضلع کپواڑہ کے گاؤں ساگی پورہ میں بھارتی فوج نے گھر گھر تلاشی کے دوران تین نوجوانوں کو شہید کیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق شہدا کی شناخت لیاقت احمد وانی اور واجد الاسلام کے نام سے ہوئی جبکہ تیسرے جوان نصیر کو بھی بھارتی فوج نے دوران تلاشی شہید کردیا۔قابض انتظامیہ نے ضلع بھر میں انٹرنیٹ سروس بھی بند کردی ہے۔ قابض فورسز نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران علاقے میں تعلیمی ادارے، موبائل اور انٹرنیٹ سروس بھی بند کر رکھی ہے۔ادھر سری نگر میں لاپتہ طالب علم احتشام بلال کی فیملی نے بھارتی ایجنسیوں کے خلاف احتجاج کیاجس میں خواتین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پرمظاہرین اور قابض افواج کے درمیان جھڑ پیں بھی ہوئیں۔بھارتی قابض افواج کی طرف سے پیلٹ گن اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کیا گیا۔گاندربل کے علاقے میں عام شہریوں اور کم عمر بچوں کو بھی گزشتہ رات انتہائی تشدد کا نشانہ بنایا گیا جن میں متعدد کی حالت تشویش ناک ہے۔ترال میں بھی گزشتہ رات کشمیری نوجوان کی بھارتی فوج کے ہاتھوں قتل پر مکمل ہڑتال اور مظاہرے کیے گئے۔علاوہ ازیں بھارتی فورسز جارحیت سے بازنہ آئی، ایل او سی لیپہ سیکٹر پر بھارتی افواج کی فائرنگ سے دولہے سمیت چار شہری زخمی ہوگے۔ بھارتی فورسز نے صبح سات بجے فائرنگ و گولہ باری شروع کرد ی جس سے بجلدار، بٹلیاں، تلہ واڑی سمیت متعدد گاؤں کے عوام محصور ہو کر رہ گئے۔ بھارتی فورسز کی فائرنگ سے کے باعث بجلدار سے تین جبکہ بٹلیاں سے ایک شہری کی زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ بجلدار سے ناصر جس کی آج بارات تھی وہ بھی زخمیوں میں شامل ہے۔ ان زخمیوں کو ایل ٹی ایف ٹی سی منتقل کردیا گیا ہے جہاں انہیں ابتدائی طبی امداد بھی دی جارہی ہے۔ بھارتی فائرنگ کے باعث نظام زندگی مکمل طور پر مفلوج ہو کر رہ گیا، عوام محفوظ مقامات پر منتقل ہونے پر مجبور ہوئے جبکہ فائرنگ کے دوران ا سکول بھی بند کردیے گئے، بازار بھی بند رہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فورسز نے لائن آف کنٹرول پرلیپہ سیکٹر میں شہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ کردی۔ بھارتی فورسز نے شہری آبادی پر بھاری ہتھیاروں سے فائرنگ کی ہے۔ بھارتی فوج کی فائرنگ سے 4 شہری شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ پاک فوج نے جوابی فائرنگ کرتے ہوئے منہ توڑ جواب دیا۔ پاک فوج نے بھارتی فوج کی چیک پوسٹوں کو نشانہ بنایا ہے۔ زخمی ہونیوالوں میں بٹلیاں سے شوکت عباسی، بجلدار سے منیر، ناصر اور ظہیر شامل ہیں۔یاد رہے وادی لیپہ میں گزشتہ ایک ہفتے سے مسلسل بھارتی فائرنگ سے 8 زخمی اور ایک شہادت بھی ہو چکی ہے جب کہ بہت سے مکان کو نقصان بھی پہنچائے۔سابق وزیر حکومت چودھری محمد رشید نے وادی لیپہ کی سول آبادی پر انڈین فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے اقوام عالم سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سول آبادی پر بھارتی افواج کی بلا جواز فائرنگ کا سختی سے نوٹس لے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ