بجلی چور کو ہرگز معاف نہیں کرنا، مفت بجلی کی تقسیم بند ہونی چاہیے

36

حیدرآباد(نمائندہ جسارت) حیسکو ترجمان کے مطابق چیف ایگزیکٹو آفیسر حیسکو رحم علی اوٹھوکی ہدایات ہیں کہ بجلی چور کو ہرگز معاف نہیں کرنا اور مفت بجلی کی تقسیم بند ہونی چاہیئے، اس سلسلے میں اقدامات کرتے ہوئے حیسکو میں خصوصی ریکوری ٹاسک فورس نے نوابشاہ ، سانگھڑ، سکرنڈ اور تھانہ بولا خان میں کاروائیاں کرتے ہوئے تھانہ بولا خان اور سانگھڑ میں زرعی بجلی کنکشن (ٹیوب ویل ) کے 30 کنکشن 69 لاکھ 35 ہزار کے واجبات کی عدم ادائیگی پر منقطع کردیئے ہیں اور صارفین کو بجلی کے بلوں کی تمام واجبات ادا کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ، جس کے بعد جمع شدہ بل کے بعد ہی بجلی کا کنکشن منقطع کردیا جائے گا ۔ 50 کے وی اے کے پانچ اور 25 کے وی اے کے 11 ٹرانسفارمرز سے بجلی بند کردی گئی ہے ۔ اور اس کے علاوہ نوابشاہ سکرنڈ، قاضی احمد و گردونواح کے علاقوں میں کاروائیاں کرتے ہوئے نادہندگان سے بقایاجات کی عدم ادائیگی پر 1095 بجلی کے کنکشن منقطع کیئے گئے ہیں ، اور1905 غیر قانونی بجلی کے کنکشن منقطع کردیئے گئے ہیں، اور نادہندگان سے 97 لاکھ سے زائد کی وصولی بھی کی گئی ہے ۔ واضح ہے کہ حیسکو چیف کے حکامات ہیں کہ 100% وصولی کو ہر صورت میں مکمل کرنا ہے اور کسی بھی صورت میں بغیر جمع شدہ بجلی کے بلوں کے کنکشن چلنے نہیں دیئے جائے ، باقیداروں کے بجلی کے کنکشن منقطع کیئے جائیں اور بجلی کے بحالی کیلئے پہلے بجلی کے بل کی جمع شدہ کاپی چیک کریں بعد میں کنکشن کی دوبارہ بحالی کا کام کریں۔ اور نادہندگان کو آگا ہی دی جائے کہ جن صارفین پر حیسکو کے زیادہ واجبات ہیں انہیں حیسکو انتظامیہ آسان اقساط کے بل جمع کرانے کے شرائط پر بجلی بحال کی جائے گی ۔انہوں نے مزید کہا کسی بھی بجلی چوری میں ملوث افراد کے ساتھ کسی بھی قسم کی رعایت نہیں برتی جائے ۔ بجلی چوروں کو کیفر کردار تک پنہنچانے کیلئے متعلقہ تھانے میں بجلی چوری کی FIR درج کرنے کرائیں ، انہوں نے مزید کہا کہ حیسکو میں ایسے افسران /ملازمین کیلئے کوئی گنجائش نہیں جو دیئے گئے ٹارگٹ کو پورا نہ کرسکیں ، انہیں گھر بھیج دیا جائے گا ، تمام افسران و ملازمین سن لیں کہ فرائض میں غفلت کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.