سندھ کابینہ ، پلاسٹک کی تھیلیوں اور نئی غاڑیوں کی خریداری پر پابندی

52

 

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ کابینہ نے سندھ میں پولی تھین بیگ کے استعمال پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کر لیا جبکہ نئی سرکاری گاڑیوں کی خریداری پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔نئی سرکاری گاڑیوں پر پابندی 3 سال تک رہے گی۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت سندھ کابینہ کا اجلاس ہوا۔اجلاس میں محکمہ ماحولیات کے حکام نے بتایا کہ پولی تھین بیگ کی تیاری اوراستعمال جرم ہے۔کابینہ نے پولی تھین بیگ کے استعمال کیخلاف محکمہ ماحولیات کی سفارشات کی منظوری دیدی۔ترجمان کے مطابق 3 ماہ میں مرحلہ وارتمام اضلاع میں پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی ہوگی۔اجلاس میں نئی سرکاری گاڑیوں کی خریداری پر پابندی لگا دی گئی،نئی گاڑیوں پر پابندی 3 سال تک کے لیے رکھی گئی ہے۔علاوہ ازیں صوبائی کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ گورنر، وزیر اعلیٰ، چیف جسٹس، چیف سیکرٹری، وزیر داخلہ، اسپیکر سندھ اسمبلی، آئی جی سندھ اور ایڈیشنل آئی جیز کو بلٹ پروف گاڑیاں فراہم کی جائیں گی۔اگر کسی وزیر یا افسر کو کسی قسم کا خدشہ لاحق ہوگا تو کابینہ کی منظوری سے اسے بلٹ پروف گاڑی فراہم کی جائے گی۔صوبائی کابینہ نے بیمار و معمر قیدیوں کی رہائی کے لیے ہر 3 ماہ میں نئی لسٹ مرتب کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کابینہ نے خطرناک امراض میں مبتلا معمر قیدیوں کی رہائی کی بھی منظوری دی۔ترجمان کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ محکمہ جیل کی میڈیکل کمیٹی معمر قیدیوں کی تفصیلات کابینہ کو ارسال کرے گی جبکہ ضلعی انتظامیہ کے ذریعے رہائی پانے والے قیدیوں پر نظر رکھی جائے گی۔اجلاس میں آئی جی پریزن اور ڈی آئی جی پریزن کی بھرتی کے قوانین پر بحث ہوئی۔ کابینہ نے 2015 ء اور 2018 ء کے قوانین کو مسترد کر کے 1978 کا اصل رول 890 بحال کردیا۔رول کے تحت آئی جی پریزن کی ترقی ڈی آئی جی پریزن سے کی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ جیل خانہ جات کا نام تبدیل ہونا چاہیے، جیل پولیس کو اسپیشل فورس کا درجہ دیا جائے گا۔صوبائی کابینہ نے پولیس افسران کے تقرر اور تبادلوں سے متعلق کمیٹی بھی تشکیل دے دی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ