پاکستانی معیشت عالمی اقتصادی وسیاسی حالات سے متاثرہوئی،مورین

69

کراچی (اسٹاف رپورٹر )پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) کے مینیجنگ ڈائریکٹر رچرڈ مورین (Richard Morin)نے کہا ہے کہ پاکستان میں کیپیٹل اور کرنسی مارکیٹ پاکستان کے معاشی حالات کے ساتھ ساتھ عالمی اقتصادی اور سیاسی حالات کی وجہ سے متاثر ہوئی ہیں۔عالمی منڈیاں بحران کے دور سے گزر رہی ہیں اور اس وجہ سے پاکستان جیسی بڑھتی ہوئی مارکیٹیں خاص طور پر متاثر ہو رہی ہیں۔ ابھرتی ہو ئی مارکیٹوں کے انڈیکس میں تقریباً 14 فیصد کی کمی ہوئی ہے۔ دوسری مارکیٹیں جس میں چین کی اسٹاک مارکیٹ شامل ہے متاثر ہوئیں ان کے انڈیکس25 فیصد تک کم ہوئے ہیں۔ اپنے ایک انٹر ویو میں انہوں نے کہا کہ ان حالات کی وجہ سے کرنسی مارکیٹیں بھی متاثر ہو ئی ہیں بعض ممالک کو ان حالات سے نکلے کے لیے اپنی کرنسی کی قدر میں 90 فیصد تک کمی کرنی پڑی ہے۔ ارجنٹینا نے اپنی کرنسی کی قدر90 فیصد کم کی، بھارت نے اپنے روپے کی قدر 15فیصد کم کی ۔ پاکستان کااپنی کرنسی کی قدر میں کمی کیے بغیر ان حالات سے نکلنا مشکل تھا لہذا اس نے روپے کی قدر 19فیصد کم کی۔ رچرڈ مورین نے کہا کہ عالمی ابھرتی ہوئی مارکیٹوں کی کارکردگی اچھی نہیں ہے۔ ہمیں عالمی حالات پر نظر رکھنی ہے کہ دنیا میں کیا ہو رہا ہے۔تمام ابھرتی ہوئی مالی منڈیاں اور اس میں پاکستان شامل ہے ایک مرحلے سے گزرتی ہیں اور عالمی حالات سے متاثر ہوتی ہیں۔ ان میں امریکا کی جانب سے سود کی شرح میں اضافہ اورچین کے ساتھ جنگی راستہ اپنانا اور دنیا کے دوسرے حالات شامل ہیں۔عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بھی بڑھی ہیں۔ اگرچہ یہ حالات ناخوشگوار ہیں لیکن ان کے بارے میں سرمایہ کاروں کو لمبے عرصے کے لیے پریشان نہیں ہونا چاہیے اور اس کو عالمی تناظر میں دیکھا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.