جاوید اشرف قاضی ،راجہ پرویز کے نام ای سی ایل سے نکالنے کی استدعا مسترد ،رائل پام کلب کے سی ای او شیخ رمضان گرفتار

96

اسلام آباد/ لاہور (آن لائن+ نمائندہ جسارت) چئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کرپشن میں ملوث ریلوے کے سابق وفاقی وزیر جنرل (ر) جاوید اشرف قاضی اور سابق وزیر اعظم راجا پرویز اشرف کے نام ای سی ایل سے نکالنے کی استدعا مسترد کردی۔ جبکہ پشاور تا ڈیرہ اسماعیل خان160 سڑک کی تعمیر کے دوران قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے کے الزام میں رائل پام کلب کے سی ای او اور حسنین کنسٹرکشن کمپنی کے مالک شیخ رمضان اور اسلام آباد ڈپلو میٹک انکلیو میں واقع شٹل سروس میں کروڑوں کی خوردبرد کے الزام میں نصرت اللہ اور غلام سرور سندھو کو احتساب بیورو نے گرفتار کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق چےئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کرپشن میں ملوث ریلوے کے سابق وفاقی وزیر جنرل (ر) جاوید اشرف قاضی اور سابق وزیر اعظم راجا جاوید اشرف کے نام ای سی ایل سے نکالنے کی استدعا مسترد کردی ہے۔ جنرل (ر) جاوید اشرف قاضی کیخلاف اربوں روپے کی کرپشن کے مقدمات ہیں جن کی تحقیقات آخری مراحل میں ہیں جبکہ سابق وزیر اعظم راجا پرویز اشرف کے خلاف چین سے درآمد کیے گئے ریلوے انجن کی خریداری میں اربوں روپے کی کرپشن کے مقدمات کی تحقیقات جاری ہیں۔ دونوں ملزمان نے چےئرمین نیب جاوید اقبال سے اپنے نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست دی تھی اور خواہش ظاہر کی تھی کہ وہ بیرون ملک جانا چاہتے ہیں ۔ چےئرمین نے ان کی درخواستیں مسترد کردی ہیں اور متعلقہ حکام کو ان کے خلاف تحقیقات فوری مکمل کرنے کا حکم دیاہے۔ علاوہ ازیں نیب نے رائل پام کلب کے سی ای او اور حسنین کنسٹرکشن کمپنی کے مالک شیخ رمضان کو گرفتار کر لیا اور نیب پختونخوا کی تحویل میں دینے کے لیے ان کا ایک دن کا راہداری ریمانڈ بھی لے لیا۔ ملزم پر پشاور سے ڈیرہ اسماعیل خان160سڑک کی تعمیر میں بے ضابطگیوں کا الزام ہے۔ شیخ رمضان کے معیاری کام نہ کرنے کی وجہ سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔ نیب لاہور نے انہیں گرفتار کرکے راہداری ریمانڈ کے لیے احتساب عدالت میں پیش کیا۔ راہداری ریمانڈ کے بعد ملزم رمضان شیخ کو نیب پشاور کی تحویل میں دے دیا جائے گا تاکہ ملزم کا متعلقہ عدالت سے تفتیشکے لیتے ریمانڈ لیا جاسکے۔مزید برآں ڈپلو میٹک انکلیو میں واقع شٹل سروس میں کروڑوں روپے کی خوردبرد کرنے والے سابق رکن پلاننگ اور صدر جموں کشمیر ہاؤسنگ سوسائٹی بریگیڈئیر نصرت اللہ اور ڈی جی پلاننگ غلام سرور سندھو کو بھی قومی احتساب بیورو نے گرفتار کر لیا ۔ذرائع کے مطابق 2005ء کے ادوار میں امریکن ایمبیسی کے ایریا میں شٹل سروس بنائی گئی جس کے ذریعے ایمبیسی کے اندر آنے جانے والے عوام کو سروس کم ریٹ پر فراہم کی جاتی اس مقصد کے لیے شٹل سروس کے ہر سال ٹھیکے دیے جاتے تھے اس دوران ان ٹھیکے جات پر کروڑوں روپے کی خورد برد کی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ