آسیہ مسیح کیس میں نظر ثانی کی اپیل جلد لگائی جائے‘طاہر اشرفی

60

لاہور (نمائندہ جسارت)پاکستان علما کونسل کے مرکزی چیئرمین اورو فاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمودا شرفی نے کہا ہے کہ آسیہ مسیح کیس میں نظر ثانی کی اپیل جلد لگائی جانی چاہیے ، ملک کے اندر بد امنی اور انتشار پھیلانے والی قوتوں کو حکومت اور عوام کو مل کر روکنا ہو گا۔ان خیالات کااظہار انہوں نے مختلف مکاتب فکر اور مذاہب کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔طاہرمحمود اشرفی نے کہا کہ مدعی کے وکلا کے ساتھ ملک کے مقتدر اور جید علما کرام کو بلا کر ناموس رسالت اور عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے سلسلے میں ان کا مؤقف بھی سنا جائے ۔انہوں نے کہاکہ انتہا پسندی ، دہشت گردی اور فرقہ ورانہ تشدد کے خلاف منظم اور متحد ہو کر جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے ، پاکستان میں رہنے والے غیر مسلموں کو کسی گروہ یا جماعت سے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں، اسلام امن اور محبت کا دین ہے۔ انہوں نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کا تحفظ ہر مسلمان کی ذمے داری ہے اور کسی گروہ یا جماعت کو یہ اختیار نہیں دیا جا سکتا کہ وہ اسلام اور مقدسات کے نام پر ملک میں انتشار اور فساد پیدا کرے۔ مولانا سمیع الحق کی شہادت پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے حافظ طاہر اشرفی نے کہا کہ سمیع الحق شہیدکے قاتل روز روشن کی طرح واضح ہیں ، مولانا کو اسلام اور پاکستان کی محبت میں شہید کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کل ملک بھر میں یوم شہید مولانا سمیع الحق منایا جائے گا اور مولانا سمیع الحق کے قاتلوں کی گرفتاری کے لیے پُرامن احتجاج کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ