ابصار سید کے اعزاز میں الوداعی تقریب

69

سینئر صحافی اور مقامی اُردو روزنامے کے نیوز ایڈیٹر ابصار سید کی مستقل پاکستان روانگی کے موقع پر ان کی صحافتی خدمات کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے جدہ میں پاکستانی صحافیوں کی تنظیم پاکستان جرنلسٹس فورم نے ایک الوداعی تقریب کا اہتمام کیا۔ جس میں فورم کے ارکان کےعلاوہ ارشد منیر پریس قونصلر پاکستان قونصل جنرل جدہ، ڈاکٹر محمد لیئق اللہ خان صداکار و نیوز ریڈر سعودی ریڈیو جدہ اور انگریزی روزنامہ سعودی گزٹ کے ایگزیکٹو ایڈیٹر رام نارائن نے خصوصی شرکت کی۔ مقررین نے کہا کہ ابصار سید کہنہ مشق صحافی ہونے کے ساتھ بہت اچھے انسان بھی ہیں۔ اخبار کی آبیاری اور ترقی کے لیے انتھک محنت کرنے اور اپنی 24 برس کی خدمات کے دوران انہوں نے کبھی کسی سے نہ کوئی گلہ شکوہ کیا اور نہ کسی موقع پر کسی کی حوصلہ شکنی کی۔ انہوں نے عملی صحافت کرنے کے ساتھ بہت سے شائقین کو اس اہم شعبے میں تربیت بھی فراہم کی۔ ارشد منیرنے ابصار سید کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہرایک کو اخبار کا پلیٹ فارم استعمال کرنے کا موقع فراہم کیا۔
ابصار سید نے 24برس مسلسل جدہ میں صحافتی خدمات کا ذکر کرتے ہوئے اپنے تمام ساتھیوں کے تعاون اور حسنِ سلوک کا شکریہ ادا کیا۔ ایک اور وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے اپنی زندگی میں اب تک سوائے صحافت کے کوئی دوسرا کام نہیں کیا۔ انہوں نے اپنی پرورش اور والدین کی تربیت کا بھی ذکر کیا۔ انہوں نے بتایا کہ والد صاحب صبح 8بجے لے کر بیٹھتے تھے اور رات 10بجے چھوڑتے تھے۔ اس دوران صحافت کی مختلف اصناف کے بارے میں آگاہ کرتے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ میں نے ایک ایک دن میں 150سے زائد خبروں کے ترجمے بھی کیے۔
تقریب کے اختتام پر فورم کی طرف سے انہیں یادگاری شیلڈ اور تحائف بھی پیش کیے گئے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ