حکومت عوام کو ریلیف دینے کے بجائے انتقامی کارروائی میں لگ گئی،پیپلز پارٹی

68
بلاول عدالت عظمیٰ کے باہر میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں
بلاول عدالت عظمیٰ کے باہر میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں

اسلام آباد(آن لائن) حکومت عوام کو ریلیف دینے کے بجائے انتقامی کارروائی میں لگ گئی،پیپلز پارٹی۔تفصیلات کے مطابق چیرمین پیپلز پار ٹی بلاول زرداری نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی گرفتاری کوانتقامی کارروائی قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ نیب کی جانب سے ضمنی انتخابات سے قبل بڑی پارٹی کے رہنما کو گرفتار کرکے کیا ثابت کیا جا رہا ہے؟۔ ان خیالات کا اظہار بلاول زرداری نے سرگودھا دورہ کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر کو گرفتار کرنے سے پہلے قومی اسمبلی کے ا سپیکر کو آگاہ کیا جاتا ہے مگر انہیں گرفتار کرنے سے پہلے ا سپیکر کو بھی نہیں بتایا ہے جو ایک انتقامی کاروائی کا شاخسانہ لگتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کی کوشش ہے کہ اصل مسائل سے توجہ ہٹاکر ڈرامے بازی کرتے رہیں تاہم پیپلزپارٹی عوامی مسائل اجاگر کرتی رہے گی۔ پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماء خورشید شاہ نے کہا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی میں تمام مقدمات کا جائزہ لیا جائے ، اس طرح کی گرفتاریوں سے سیاسی انتقام کی بو آتی ہے ، شہباز شریف کی گرفتاری پارلیمان کی توہین ہے ، حکومت انتقامی کارروائیوں سے گریز کرے ۔ شہباز شریف کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ 100 روزہ پروگرام کی ناکامی پر حکومت ایسے اقدام اٹھا رہی ہے اپنی ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کے لیے ایسے ہتھکنڈے شروع کردیے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ شہبازشریف کی اس انداز میں گرفتاری پارلیمان کی توہین ہے،حکومت انتقامی کارروائیوں سے گریزکرے ،شہبازشریف قائد حزب اختلاف ہیں اس طرح گرفتارنہیں کرنا چاہیے۔ سیاسی قیادت کے تمام مقدمات پرپارلیمنٹ کو پہلے اعتماد میں لیا جائے۔پیپلزپارٹی کے صوبائی وزیر سعید غنی کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آئی نہیں لائی گئی ہے۔ اپوزیشن لیڈر کو گرفتار کرنا مناسب نہیں، ایک کیس میں بلا کر دوسری کیس میں کیوں گرفتار کیا گیا‘ کسی اور دن بھی تو گرفتار کیا جاسکتا تھا‘ فواد چودھری کے بیان سے ایسا لگتا ہے کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو حکومت کی ایما پر گرفتار کیا گیا ہے‘ پاکستان پیپلزپارٹی نے آرٹیکل 62 اور نیب قوانین میں ترامیم کے حوالے سے ن لیگ سے کہا تھا لیکن اب یہ قوانین ان کے ہی گلے پڑ گئے‘ احتساب کا مطالبہ پاکستان پیپلزپارٹی نے ہمیشہ کیا ہے کوئی ٹھوس شواہد ملے تو نیب کارروائی کرے ۔جب نواز شریف کو پکڑا گیا تو فیصلہ آیا کہ ان پرکوئی کرپشن ثابت نہیں ہوئی ہے۔ نیب کی بدقسمتی وہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال ہوتی ہے۔ ایف آئی اے سے پوچھا جائے کہ فالودہ بیچنے والے کے اکاؤنٹ میں آئے پیسے کس کے تھے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ