کوئٹہ میٹرو پولیٹن کارپوریشن کا بجٹ اجلاس مچھلی بازار بن گیا

22

کوئٹہ(نمائندہ جسارت)کوئٹہ میٹروپولیٹن کار پوریشن کا بجٹ اجلاس مچھلی بازار بن گیا۔ بدعنوانی کے الزامات پر حکومتی اور اپوزیشن ارکان الجھ پڑے، خواتین ارکان نے بھی ایک دوسرے کو دھکے دیے ۔ بجٹ اجلاس ڈپٹی میئر کوئٹہ محمد یونس بلوچ کی زیر صدارت ہوا جس میں کارپوریشن کا آئندہ مالی سال کے لیے 4 ارب 79 کروڑ روپے کا بجٹ پیش کیا گیا۔ اجلاس کے دوران اپوزیشن نے میئر، ڈپٹی میئر اور دیگر حکومتی ارکان پر بعدعنوانی کے الزامات لگاتے ہوئے احتجاج کیا۔ ہنگامہ آرائی اور شور شرابے کے باعث ایوان مچھلی بازار بن گیا۔اپوزیشن ارکان کا کہنا ہے کہ اربوں روپے کا بجٹ کرپشن کی نذر ہوجاتا ہے۔شہر میں صفائی کا کوئی نظام موجود نہیں۔ اپوزیشن کے شور شرابے اور احتجاج کے باوجودمیٹروپولیٹن کارپوریشن کا بجٹ اکثریتی رائے سے منظور کرلیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ