کراچی وفاقی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے گورنر سندھ

74
قائم مقام صدر سائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری نوید واحد گورنر سندھ عمران اسماعیل کو ایسوسی ایشن کی شیلڈ پیش کررہے ہیں
قائم مقام صدر سائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری نوید واحد گورنر سندھ عمران اسماعیل کو ایسوسی ایشن کی شیلڈ پیش کررہے ہیں

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی وفاقی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے ۔ کراچی کے شہریوں نے پی ٹی آئی کے 14اراکین قومی اسمبلی کو منتخب کر کے مینڈٹ دیا۔ وزیر اعظم عمران خان نے کراچی کے شہریوں سے جو وعدے کیے ان پر عمل درآمدشروع ہو گیا ہے۔ کراچی سے متعلق وفاقی حکومت کے منصوبے ڈی سیلینیشن پلانٹ، گرین بس منصوبہ، TP4واٹرٹریٹمنٹ پلانٹ، نادرن بائی کو4لین بنانا اور لیاری ایکسپریس وے کو ہیوی ٹریفک کے لیے اپ گریڈیشن منصوبہ کی تکمیل کراچی انفرااسٹرکچر ڈولپمنٹ کمپنی کے ذریعے ہو گی۔ان خیالات کا اظہار گورنر سندھ عمران اسماعیل نے سائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری کے دورہ کے موقع پر صنعتکاروں سے خطاب میں کیا۔ بعد ازاں انھوں نے منگھوپیر روڈ کی ازسرنو تعمیر کا سنگ بنیاد رکھا۔گورنر سندھ نے صنعتکاروں کو خطاب میں بتایا کہ گورنر ہاؤس میں گورنمنٹ سٹیزن لائزن سیل کا قیام عمل میں لا رہے ہیں جس کا مقصد شہریوں کے وفاقی وزارتوں و اتھارٹیز سے متعلق تمام مسائل و معاملات گورنرہاؤس کے ذریعے حل کروانا ہو گا تاکہ کراچی کے شہریوں کو اسلام آباد جانے کے بجائے اپنے شہر میں سہولت دستیاب ہو۔انھوں نے بزنس کمیونٹی سے سیل کے قیام سے متعلق تجاویز بھی طلب کیں اور بتایا کہ سیل میں صنعتکاروں کو بھی نمائندگی دی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ کراچی میں کمبائنڈ ایلفوئنٹ ٹریٹمنٹ پلانٹس کی فوری تعمیر کے حوالے سے وزیر اعظم سے بات کریں گے۔TP4واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ سے صنعتوں کو ری سائیکل پانی فراہم کیا جائے گا۔انھوں نے وعدہ کیا کہ سائٹ انڈسٹریل ایریا کی ٹوٹی ہوئی سڑکوں کی مرمت جلد کردی جائے گی۔زبیر موتی والا کی طرف سے سائٹ میں انفرااسٹرکچر کی تعمیر کے حوالے سے فنڈزایسوسی ایشن کو دینے کی تجویز پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ سڑکوں کی تعمیر صوبائی و لوکل گورنمنٹ کی ذمہ داری ہے صنعتیں اپنا کام کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ