دنیا کی مارکیٹوں میں حلال فوڈ کی کھپت بڑھ رہی ہے

64
حلال فوڈ پروڈکٹ سمینا ر میں فیڈریشن کے سنیئر نائب صدر سید مظہر علی نا صرکے ساتھ دیگر شرکا کا گروپ فوٹو
حلال فوڈ پروڈکٹ سمینا ر میں فیڈریشن کے سنیئر نائب صدر سید مظہر علی نا صرکے ساتھ دیگر شرکا کا گروپ فوٹو

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ہیڈ آفس کراچی میں حلال فوڈ پروڈکٹ پر سیمینار منعقد کیا گیا تا کہ پاکستان کی حلال پروڈکٹ دنیا کی حلال ما رکیٹ میں کھپت کا جا ئز ہ لیا جا ئے ۔سیمینار میں حکومت پر زور دیا گیا کہ پاکستان حلال ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا قیا م عمل میں لا یا جا ئے تا کہ پاکستان کی حلال پروڈکٹ کو سرٹیفکیٹ جا ری کر سکے اور ان پر نظر بھی رکھی جا سکے ۔ سیمینار سے خطا ب کر تے ہو ئے ایف پی سی سی آئی کے سینئر نا ئب صدر سید مظہر علی نا صر نے کہا کہ با وجو د ایک مسلم ملک ہو تے ہو ئے پاکستان کا شیئر دنیا کی ما رکیٹ میں صر ف 0.25فیصد ہے جو کہ ہما رے حلال پروڈکٹ کو بہتر کر کے اور اسٹو ریج کی سہو لت کو بڑھا کر بہتر کیا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہما رے ملک میں حلال مصنوعات کی اہمیت کو اجا گر کر نے کی بڑ ی ضروورت ہے کیونکہ حلال مصنوعات کھانے کی چیز وں میں نہیں بلکہ دواسازی، کا سمیٹک اور دوسری چیزوں میں بھی ہے یہ جاننا بہت ضروری ہے ۔لہذا ضرورت اس با ت کی ہے کہ لو گو ں کو بتا یا جا ئے کہ کو ئی بھی چیز استعمال کر نے سے پہلے یہ ضرورجا ن لیں کہ حلال ہے یا نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان حلال اتھا رٹی کا قیا م نا گز یر ہے اس کے ساتھ دو سرے اداروں جیسے کے PSQA, PCSIR, اورTDAP کو بھی اس کے فروغ میں مدد کر نی چاہیے ۔ ایف پی سی سی آئی کے سابق صدر ایس ایم منیر نے سیمینار سے خطاب کر تے ہو ئے کہاکہ ایسے سیمینار کی اشد ضرورت ہے تا کہ لو گو ں میں حلال مصنوعات کے استعمال کی ضرورت کو تاجر برادری اور عام لو گو ں میں اجا گر کیا جا سکے ۔ ایف پی سی سی آئی کی اسٹینڈنگ کمیٹی برا ئے حلال پروڈکٹ کے چیئر مین نے افسو س کا اظہار کر تے ہو ئے کہاکہ کو ئی بھی مسلم ملک دس بڑ ے حلال پروڈکٹ برآ مد کر نے کی فہر ست میں شا مل نہیں ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ