یورپی پارلیمنٹ مسئلہ کشمیر پر از سرنو غور کررہی ہے ‘سردار مسعود

50

اسلام آباد (اے پی پی) صدر آزادکشمیرسردار مسعود خان نے کہا ہے کہ آثار نظر نہیں آ رہے کہ بھارت مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے سنجیدہ ہو گا،نہتے کشمیری اپنی جانوں کا نذرانہ دیتے ہوئے آزادی کی جدوجہد بدستورجاری رکھیں گے،یورپی پارلیمنٹ مسئلہ کشمیر پر از سرنو غور کررہی ہے،بھارت70 سال سے مذاکرات سے بھاگ رہا ہے، کشمیری مایوس نہیں ہیں، بھارتی فوج کی جانب سے وزیراعظم آزاد کشمیر راجا فاروق حیدر کے ہیلی کاپٹر پر فائرنگ کی مذمت کرتے ہیں،بھارتی فوج کی فائرنگ سے آزاد کشمیر کے شہری بھی متاثر ہو رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں برطانوی وفد کے ساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ بھارت دہشت گردی سے باز نہیں آرہا آئے روز نہتے کشمیریوں پر بھارتی فوج مظالم ڈھا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت2003ء کے جنگ بندی معاہدے کی پاسداری کرے۔انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مسئلہ کشمیر کو جنرل اسمبلی میں اٹھایا ان کے شکر گزار ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کے حق خودارادیت کا احترام کیا جائے اور مشترکہ حریت قیادت کو رہا کیا جائے۔اس موقع پر برٹش رکن پارلیمنٹ ٹونی للویڈ نے کہا کہ کشمیر میں بھارتی فوج کی موجودگی مسئلہ کشمیر کا حل نہیں ہے، کشمیر میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے اس پر دنیا کی توجہ نہیں دلائی جا رہی، اس مسئلے کوعالمی سطح پر اٹھانا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ