ایرانی سفیر کی جام کمال سے ملاقات، مشترکہ ایوان صنعت و تجارت کا دورہ

66

کوئٹہ (نمائندہ جسارت) ایرانی سفیر مہدی ہنر دوست کی وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال سے ملاقات، اقتصادی اور ثقافتی تعلقات بڑھانے، پارلیمنٹیرینز وفود کے تبادلوں اور تجارتی حجم میں اضافے کی ضرورت پر اتفاق کیا گیا، ایرانی سفیر نے پاک ایران مشترکہ ایوان صنعت و تجارت کا بھی دورہ کیا جہاں انہوں نے کہا کہ پاک ایران دو طرفہ تجارتی حجم کو 5 ارب ڈالر تک پہنچانے کے لیے دونوں ممالک کی تاجر برادری اور بزنس کمیونٹی کو بھرپور کردار ادا کرنا چاہیے، پاکستان کے دیگر صوبے بھی بلوچستان کے راستے تجارت کو فروغ دیں تاکہ اس گیٹ وے کو مزید مضبوط بنایا جاسکے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ بلوچستان سے ایرانی سفیر نے بدھ کے روز یہاں ملاقات کی، ملاقات میں وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان اور ایران کے سفیر مہدی ہنر دوست نے پاکستان اور ایران بالخصوص بلوچستان اور سیستان بلوچستان کے مابین اقتصادی، تجارتی اور ثقافتی تعلقات کے مزید فروغ، پارلیمینٹیرینز کے وفود کے تبادلوں اور دونوں ممالک کے درمیان تجارتی حجم میں اضافے کی ضرورت سے اتفاق کرتے ہوئے توقع ظاہر کی کہ وقت کے ساتھ ساتھ ان شعبوں میں تعاون کو مزید فروغ ملے گا۔ ملاقات میں اس امر پر اطمینان کا اظہار کیا گیا کہ گزشتہ 2 برسوں کے دوران پاکستان اور ایران کا تجارتی حجم بڑھ کر 1.3 ارب ڈالر تک پہنچ چکا ہے جس میں مزید اضافہ ہوگا اور دونوں ممالک کے درمیان فاصلے پیدا کرنے کی کوئی بھی سازش کامیاب نہیں ہوگی۔ ایرانی سفیر نے کہا کہ ہم پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کی جلد تکمیل کے خواہشمند ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس ماہ دونوں ممالک کی بارڈر ٹریڈ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوگا، جس میں تجارتی فروغ سے متعلق امور کا جائزہ لے کر انہیں حتمی شکل دی جائے گی۔ انہوں نے دونوں ممالک بالخصوص بلوچستان اور سیستان بلوچستان میں بینکنگ سیکٹر کے روابط کو بھی اہم قرار دیا۔ انہوں نے بتایا کہ ایران کے نجی شعبے کی ائرلائن جلد کوئٹہ تا زاہدان فضائی سروس کا آغاز کرے گی۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نے ایرانی سفیر کے موقف سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ ایران عالمی تجارتی پابندیوں کا استقامت کے ساتھ سامنا کرتے ہوئے ترقی کی منازل طے کررہا ہے اور ایران کے پاکستان کے ساتھ اقتصادی وتجارتی روابط کے فروغ کے لیے اقدامات قابل تعریف ہیں۔ ملاقات میں چاہ بہار اور گوادر کے درمیان ریلوے سروس کے آغاز اور کوئٹہ تفتان روڈ اور ریل لنک کی بہتری سے متعلق امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ اور ایرانی سفیر کے مابین سووینئر کا تبادلہ بھی کیا گیا۔ علاوہ ازیں مہدی ہنر دوست نے پاک ایران مشترکہ ایوان صنعت و تجارت کے دورے کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے اعلیٰ حکام اور بزنس کمیونٹی متحد ہوکر تمام مسائل کو سنجیدگی کے ساتھ ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لیے آگے بڑھ رہے ہیں، دونوں کے مسائل مشترکہ ہیں دہشت گردی سمیت تمام معاملات کو مل بیٹھ کر حل کرکے آگے بڑھنے کی ضرورت ہے بینکنگ سسٹم کے حوالے سے تمام فیصلے اور امور مکمل ہوچکے ہیں جس پر عملدرآمد کو یقینی بناکر تاجروں کو درپیش مشکلات سے نجات دلائی جاسکتی ہے۔ اس موقع پر پاک ایران مشترکہ چیمبر آف کامرس کی جانب سے ایرانی سفیر کو اعزازی شیلڈ دی گئی اور انہوں نے تاثراتی کتاب میں اپنے تاثرات بھی درج کیے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ