عدالت عظمیٰ کا بنی گالہ میں تمام تجاوزات گرانے کا حکم

145

اسلام آباد ( نمائندہ جسارت) عدالت عظمیٰ نے بنی گالہ میں تمام تجاوزات گرانے کا حکم دیتے ہوئے علاقہ مکینوں کے وکلا کی 3ماہ کی مہلت کی استدعا مسترد کر دی۔ بدھ کو عدالت عظمیٰ میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3رکنی بینچ نے مقدمے کی سماعت کی ۔ اس موقع پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ پہلے ہی بہت وقت دے چکے ہیں ، مزید مدد نہیں کر سکتے ، نظر ثانی کی اپیل دائر کریں ہم حکم دے چکے ہیں ، ہمیں مجبور نہ کیا جائے بنی گالہ میں تمام تجاوزات کو فوری گرایا جائے ۔ عدالت نے سروے آف پاکستان رپورٹ کے مطابق جو عمارتیں تجاوزات میں آتی ہیں گرانے کا حکم اور غیر قانونی علاقہ مکینوں کے وکلا کی 3ماہ کی مہلت کی استدعا مسترد کر دی۔علاوہ ازیں سرکاری رہائش گاہوں کو خالی کرانے سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے اسٹیٹ آفس کو ہدایت دی کہ پولیس کی جانب سے قبضہ کی جانے والی تمام عمارتوں کو سیل کردیا جائے اور جو سیل توڑے کا عدالت اسے دیکھ لے گی ۔ انہوں نے ریمارکس دیے کہ رہائش گاہ سرکار کی تھی ، حق دار کو رہائش گاہ ملنی چاہیے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ