ذوالفقار آباد ٹرمینل میں شیریں جناح کے دکانداروں کو جگہ دی جائے،حافظ نعیم

89
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم ادارہ نور حق میں شیریں جناح کالونی شاپ کیپر ویلفیئر سوسائٹی کا وفد ملاقات کررہا ہے 
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم ادارہ نور حق میں شیریں جناح کالونی شاپ کیپر ویلفیئر سوسائٹی کا وفد ملاقات کررہا ہے 

کراچی (اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلا می کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ آئل ٹینکرز ٹرمینل ذوالفقار آباد میں شیریں جناح کالونی کے دکانداروں کے لیے مختص کی گئی 50ایکٹر زمین اصل دکانداروں کے حوالے کی جائے ۔ الاٹمنٹ کے عمل میں تمام اسٹیک ہولڈرز کے حقیقی نمائندوں کو شامل کیا جائے ۔ 1500دکانداروں کو ان کے حق سے محروم کر نے اور زمین ہتھیانے کی کوشش نہ کی جائے ۔ جماعت اسلامی شیریں جناح کالونی کے دکانداروں کے جائز اور قانونی حق کے لیے جدو جہد میں ان کے ساتھ ہے ۔ عدالتِ عظمیٰ دکانداروں کو ان کے حق سے محروم کر نے کا نوٹس لے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نور حق میں شیریں جناح کالونی شاپ کیپر ویلفیئر سوسائٹی کے صدر منور حسین کی قیادت میں متاثرہ دکانداروں کے ایک وفد سے گفتگو کر تے ہوئے کیا ۔ وفد میں سوسائٹی کے جنرل سیکرٹری امانت علی ، انفارمیشن سیکرٹری محمد آصف ، آل پاکستان آئل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کے انفارمیشن سیکرٹری عبد اللہ ہمدرد اور دیگر شامل تھے جبکہ جماعت اسلامی ضلع شر قی کے امیر یونس بارائی اور جماعت اسلامی کراچی سیکرٹری اطلاعات زاہد عسکری بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ حافظ نعیم الرحمن نے وفد کو جماعت اسلامی کی جانب سے مکمل حمایت اور تعاون کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ ہم ہزاروں خاندانوں کے اس مسئلے کو کسی صورت بھی نظر انداز نہیں ہونے دیں گے اور متاثرین کو ہر ممکن مدد فراہم کریں گے اور اس مسئلے میں جماعت اسلامی کی پبلک ایڈ کمیٹی اپنا بھر پور کردار ادا کرے گی ۔ شیریں جناح کالونی کے دکانداروں کے وفد نے حافظ نعیم الرحمن کو بتایا کہ تقریباً 1500دکانداروں کا یہ مسئلہ ہے جس سے ہزاروں افراد متاثر ہو رہے ہیں ۔عدالت عظمیٰ کے حکم کے مطابق ذوالفقار آباد میں آئل ٹینکرز ٹرمینل کی منتقلی کے عمل میں شیریں جناح کالونی کے دکانداروں کے لیے 50ایکڑ زمین مختص کی گئی لیکن جب ہم وہاں جاتے ہیں تو ہمارے لیے کوئی متبادل مناسب جگہ اور سہولیات نہیں ہیں ۔ کمشنر کرا چی ، مئیر کراچی اور ایک نام نہاد جعلی ایسوسی ایشن کے چیئر مین سید یوسف شہوانی کی ملی بھگت سے اصل دکانداروں کو ان کے حق سے محروم کیا جا رہا ہے اور غلط رپورٹس بنائی جا رہی ہیں جن میں من پسند افراد اور اپنے عزیزوں اور رشتہ داروں کو دکاندار ظاہر کیا جا رہا ہے جو ہمارے ساتھ سراسر ظلم و زیادتی ہے ۔ گزشتہ دنوں ہونے والے ایک مشاورتی اجلاس میں کمشنر کراچی نے ہمیں اور آل پاکستان آئل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کے کسی نمائندے کو شر کت کی دعوت نہیں دی اور ازخود دکانوں کی الاٹمنٹ کا فیصلہ کر لیا گیا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ