فلورنس تباہی پھیلا کر آگے بڑھ گیا

58

 

عائشہ صدف

( نمائندہ جسارت /امریکا)

امریکہ کی اسٹیٹ نارتھ کیرولینا کی شہر ولمنگٹن اورس سے ملحقہ شہروں کی تاریخ میں آنے والا بدترین سیلاب Florence تباہی پھیلا کر آگے بڑھ گیا۔ ابتدا میں محکمہ موسمیات کے مطابق یہ چوتھے درجہ کا سیلاب تھا لیکن ساحل سے ٹکراتے ٹکراتے اس کی شدت مین واضح کمی آگئی تھی لیکن لاس کے باوجود جمعہ سے پیر تک چار دنوں میں چالیس انچ بارش لنڈھا کر گیا ہے اور بیس شہریوں کی جان لینے کا باعث بنا۔ ان میں ایک نومولود بچہ بھی شامل ہے جس کی لاش بعد میں نکالی گئی طوفان کی بے رحم لہریں اسے ماں کے ہاتھوں سے چھین کر لے گئیں اور ماں چیختی رہ گئی مکر کوئی اس کی مدد نہ کر سکا۔
اگرچہ اب بارش بھی منقطع ہوگئی ہے مگر نارتھ کیرولینا کے انیس دریا بڑیسیلاب کے خطرناک نشان کو چھو رہے ہیں۔دریاؤں میں پانی چڑھنے اور ڈیم کو چیک کرنے کی وجہ سے لوگوں کو ابھی بھی بعض علاقوں سے نکلوا یا جارہا ہے۔ نارتھ کیرولینا کے محکمہ موسمیات کا کہنا ہے’’ بارش کے رکنے کا یہ مطلب ہر گا نہیں ہے کہ خطرہ گزر چکا ہے’’۔ Accuweather کے میٹریالوجسٹکا کہنا ہے،’’ کچھ علاقوں میں تباہی ہلاکت خیز حد تک پہنچ کی ہے اور وہاں پپنچنے کے لئیبوٹ کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں ہے۔’’چار دن گزر جانے کے باوجود ایمرجنسی ورکروں لوگوں کو ان کے گھروں سے نکال رہے ہیں۔ ایک شخص کو اس حال میں مدد پہنچی کہ وہ گاڑی کی چھت پر کھڑا ایک تناور درخت کی شاخ کو پکڑ کر کھڑا تھا اور اس کے پاؤں پانی مین ڈوبے ہوئے تھے ایمرجنسی ورکرز کو دیکھ کر بھی وہ بے یقینی کے عالم میں۔ تھا۔بہت سے افراد کا اب بھی اندازہ نہیں ہے کہ کہاں کہاں پھنسے ہیں۔تقریباً پندرہ ہزار لوگوں نے شیلٹر میں مدد لی ہوئی ہے جن کا مستقبل قریب میں اپنے گھروں میں جانے کی امید نہیں ہے۔ ہزاروں لاکھوں گھر پانی میں ڈوب ہوئے ہیں جن سے پانی نکالنا دنوں کا نہیں مہینوں کا پروجیکٹ ہے۔والینٹئیرز کی بڑی تعداد لوگوں کو ہیلی کاپٹر یا بوٹس کے ذریعہ نکلنے میں مدد دے رہے تھے۔ علاقہ میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے تا کہ خالی گھروں میں لوٹ مار شروع نہ ہوجائے۔
گورنر Roy Cooper کا کہنا تھا،’’ ہمی؛ اایسی آفت کا سننا ہے جس نے ہماری ریاست کے بڑے حصہ پر ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں اور ابھی اگلے کئی دن سیلابی ریلوں کی وجہ سے مسائل بڑھیں گے۔’’
لوگوں کا کہنا تھا کہ آسمان اب صاف ہے لیکن اب کڑا کے دار بارش کے بجائے ہیلی کاپٹرز کے انجوں اور ان۔ مشینوں کا شور ہے جو بڑے بڑے گرے ہوئے درختوں کو کاٹ کر راستہ صاف کر رہی ہیں یہ سب ابھی بھی ماحول مین غیر معمولی پن پیدا کرنے کا باعث ہیں۔معمول سے ہٹا ہوا ہیبرش اور فلورانس و اس سے ہونے والے نقصان کا اندازہ تیس سے ساٹھ بلین ڈالر کے لگ بھگ لگایا گیا ہے۔۰۰۵،۰۰۰گھروں اور دکانوں میں بجلی غائب ہے۔سوکے قریب سڑکوں پر پانی بھرا ہوا ہے۔ شہرکے دو بڑے حصوں کو ملانے والا ایک بڑا برج پانی میں ڈوبنے والا ہے۔ صدر ٹرمپ نے نارتھ کیرولینا کو آفت زدہ قرار دے دیا ہے جس کے بعد فیڈرل گورنمنٹ یہاں کے رہائشئوں کا نقصان پورا کرنے میں اپنا کردار اداکرے گی۔

 

Print Friendly, PDF & Email
حصہ