بصرہ: ضروریات زندگی کے بحرانوں کے خلاف عوام پھر سڑکوں پر آگئے

52
بصرہ: حکومت کے خلاف عراقی نوجوان احتجاج کررہے ہیں
بصرہ: حکومت کے خلاف عراقی نوجوان احتجاج کررہے ہیں

بغداد (انٹرنیشنل ڈیسک) عراقی شہر بصرہ میں ملازمتیں اور پانی فراہم نہ ہونے پرمظاہرین ایک بار پھر سڑکوں پر نکل آئے۔ رواں ماہ حکومت مخالف مظاہروں میں 20 سے زائد مظاہرین مارے گئے۔ 7 ستمبر کو حکومت کے خلاف احتجاج کے دوران شہریوں نے ایرانی قونصل خانہ بھی جلادیا تھا، جس کے بعد بغداد حکومت نے شہر میں کرفیو نافذ کردیا۔ مشتعل مظاہرین نے امریکی قونصل خانے کی جانب جانے کی بھی کوشش کی، تاہم پولیس نے انہیں منتشر کردیا۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ حکومت کی کرپشن،
سہولیات کی عدم فراہمی اور بے روزگاری نے شہریوں کواحتجاج پر مجبور کیا ہے۔ وزیراعظم حیدر عبادی کے مطابق پانی اور دیگر سہولیات کے مسائل حل کرنے کے لیے عملی اقدامات کیے جا رہے ہیں۔
بصرہ/ عوام سڑکوں پر

Print Friendly, PDF & Email
حصہ