نیکٹا کے کردار پر نظر ثانی کا فیصلہ، بجلی قیمتوں میں اضافہ ایک ہفتے کیلیے موخر

101
اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان نیکٹا کے بورڈ آف گورنرز سے خطاب کررہے ہیں
اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان نیکٹا کے بورڈ آف گورنرز سے خطاب کررہے ہیں

اسلام آباد (اے پی پی) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نیشنل کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا) کے کردار پرنظرثانی کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جو ایک ہفتے میں اپنی سفارشات پیش کرے گی۔منگل کو عمران خان کی زیر صدارت وزیر اعظم آفس میں نیکٹا کے بورڈ آف گورنرز کا اجلاس ہوا۔یہ نیکٹا کے قیام کے بعد سے اس کے بورڈ آف گورنرز کا پہلا اجلاس تھا۔ اجلاس میں وزیر دفاع ، وزیر خزانہ، وزیر قانون، چاروں صوبوں اور گلگت بلتستان کے وزرائے اعلیٰ، وزیر اعظم آزاد کشمیر ، وزیر مملکت داخلہ ، ڈی جی آئی ایس آئی، سیکرٹری داخلہ ، نیشنل کوآرڈینیٹر نیکٹا، چیف سیکرٹریز، پولیس کے آئی جیز اور سینئر حکام نے شرکت کی۔ نیشنل کوآرڈینیٹر نیکٹا نے شرکاء کو نیکٹا کے مینڈیٹ اور کردار کے بارے میں بریفنگ دی۔ اجلاس کے دوران 20 نکاتی نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا ۔ اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان نے انتہا پسندی کے انسداد اور دہشت گردی کی لعنت کے خلاف طویل جنگ لڑی ہے ، ہم نے اپنے ہزاروں شہریوں اور سیکورٹی اہلکاروں کی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے۔ وزیر اعظم نے کہاکہ آج سیکورٹی کی بہتر صورتحال فوج ، انٹیلی جنس ، پولیس و دیگر قانون نافذکرنے والے سیکورٹی اداروں کی مربوط کوششوں کا نتیجہ ہے۔ عمران خان نے کہاکہ نیکٹاکے قیام سے اس کے بورڈ آف گورنرز کا ایک بھی اجلاس طلب نہیں کیا گیا، گزشتہ حکومت کی غفلت کے نتیجے میں ایک اہم ادارے کے امور کارکو بہتر بنانے پر توجہ کا فقدان رہا۔ وزیراعظم نے کہاکہ نئے زمینی حقائق ادارے کے کردارپر نظر ثانی کے متقاضی ہیں تاکہ نیکٹا کو اچھی طرح متعین مینڈیٹ کے ساتھ حقیقی طورپر ایک فعال اور جدید خطوط پر استوار ادارہ بنایا جاسکے ۔

اسلام آباد( صباح نیوز)کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری آئندہ اجلاس تک موخر کردی،وزیر خزانہ اسد عمر کی صدارت میں کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری آئندہ اجلاس تک موخر کردی گئی، ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران پاور ڈویژن اور نیپرا کو 5 سالہ طویل المیعاد حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت کی گئی، اس کے علاوہ پاور ڈویڑن اور نیپرا سے غریب و متوسط طبقے پر بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا کم سے کم بوجھ ڈالنے سے متعلق
تجاویز بھی طلب کرلی گئیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں ای سی سی نے ایل این جی ٹرمینل اور ایل این جی معاہدوں سے متعلق رپورٹ مسترد کرتے توانائی ڈویژن کو مکمل رپورٹ تیار کرکے اگلے اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ