زلفی بخاری کی بطور معاون خصوصی تقرری کو سپریم کورٹ میں چیلنج

190

وزیراعظم عمران خان کے دوست زلفی بخاری کی بطور معاون خصوصی تقرری کوسپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔

درخواست گزار عادل چھٹہ نے سپریم کورٹ میں آئینی درخواست دائر کر تے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ دہری شہریت کا حامل شخص رکن قومی اسمبلی منتخب نہیں ہو سکتا جبکہ معاون خصوصی نے بھی وہی زمہ داریاں ادا کرنی ہیں جو منتخب رکن اسمبلی کرتا ہے ۔ لہذا زلفی بخاری کو فوری طور پر کام سے روکتے ہوئے عدالت ان کی تقرری کو کالعدم قرار دے دیا۔

درخواست میں وزیر اعظم عمران خان اور کابینہ ڈویژن کو فریق بنایا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ جو کام براہ راست نہیں ہو سکتا وہ بلا واسطہ بھی نہیں کیا جا سکتا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ