ایڈن ہاؤسنگ کرپشن کیس؛سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری کا داماد گرفتار

216

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ایڈن ہا ؤ سنگ سوسائٹی میں اربوں روپے کے مبینہ فراڈ سے متعلق مقدمے میں سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کے داماد مرتضی کو دبئی میں گرفتار کرلیا گیاہے۔

 اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےوفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورہ لاہور کے موقع پر ایڈن ہاؤسنگ سوسائٹی کے متاثر ہ افراد نے احتجاج ریکارڈ کروایاتھا،اب اس معاملے میں بڑی کارروائی عمل میں آئی ہے۔ ایف آئی اے نے اس اسکینڈل میں ملوث سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری کے دامادمرتضی کو دبئی سے گرفتار کر لیا ہے۔

وفاقی وزیراطلاعات نے کہا کہ ایڈن ہاؤسنگ کے نام سےا سکیم کا اعلان ہوا تھاجس کے اندر پلاٹوں کی فروخت میں بڑا فراڈ ہوا ۔ دو سو سے تین سو سے زائد افراد نے اس اسکیم میں اپنی ساری زندگی کی جمع پونجی خرچ کر کے پلاٹ خریدے لیکن فراڈ کے باعث ان افراد کی زندگی بھر کی جمع پونجی ڈوب گئی تھی۔

انہوں نے کہاکہ ایڈن سوسائٹی کے مالک اس وقت کےچیف جسٹس افتخار چوہدری کے سمدھی تھے۔ حیران کن طور پر افتخار چوہدری نے خود یہ وہ کیس اٹھا لیا اور یک طرفہ فیصلہ کرتے ہوئے ایڈن سوسائٹی کے مالک کو ریلیف دے دیا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ ایڈن ہاؤسنگ سوسائٹی کیس میں گرفتاری سے احتساب کے عمل میں بڑی کامیابی ملی ہے،اب پاکستان کے اندر طاقتور کا بھی احتساب شروع ہوچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کیس میں افتخار چوہدری کے بیٹے ارسلان افتخار، ان کی صاحبزادی اور سمدھی بھی نامزد ہیں جن کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔وزیر اعظم عمران خان نےاس کیس کے حوالے سے 24 گھنٹے میں حتمی  رپورٹ طلب کر لی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ