بغاوت کیس:نواز شریف 8 اکتوبر کو طلب،صحافی کے وارنٹ گرفتاری جاری

80

لاہور ہائیکورٹ نے متنازع انٹرویوکیس میں نواز شریف کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا جبکہ صحافی سرل المیڈا کے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیدیا۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں تین رکنی فل بینچ نے سابق وزرائے اعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے خلاف بغاوت کی کارروائی کے لیے درخواست پر سماعت کی۔اس موقع پر سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی عدالت کے روبرو پیش ہوئے جب کہ نواز شریف اور صحافی سرل المیڈا پیش نہ ہوئے۔

وکیل نصیر بھٹہ ایڈووکیٹ نے نواز شریف کی عدم پیشی سے متعلق بتایا کہ ان کی اہلیہ کے انتقال کے بعد لوگ افسوس کے لیے آرہے ہیں اس لیے چالیسویں کے بعد کی تاریخ رکھنے کی استدعا ہے۔اس موقع پر جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے کہا کہ مقدمے کو 8 اکتوبر کو سن لیتے ہیں، نواز شریف آئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں پیش ہوں۔ وکیل صفائی نے بتایا کہ نواز شریف آئندہ سماعت پر پیش ہوجائیں گے ۔

شاہد خاقان عباسی کے وکیل نے بتایا کہ آئندہ عدم پیشی نہیں ہوگی، شاہد خاقان عباسی عدالت میں پیش ہوگئے ہیں۔ جسٹس مظاہر علی اکبر نے کہا کہ ہاں جی دیکھ رہا ہوں شاہد خاقان عباسی ایک لمبے آدمی ہیں۔ وکیل نے بتایا کہ سرل المیڈا کی ذمہ داری تھی کہ وہ عدالت پیش ہوں عدالت نے ریمارکس دیئے کہ بیان حلفی دیں سرل المیڈا آئندہ سماعت پر پیش ہوں گے،عدالت نے صحافی سرل المیڈا کے پیش نہ ہونے پر ان کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کرتے ہوئے سماعت 8 اکتوبر کے لیے ملتوی کردی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ