منی بجٹ کا سارا نزلہ غریب عوام پر گرا ہے، لیاقت بلوچ

112
حیدرآباد: جماعت اسلامی کے جنرل سیکرٹری لیاقت بلوچ‘ اسداللہ بھٹواورڈاکٹر معراج الہدیٰ تربیتی اجتماع سے خطاب کررہے ہیں
حیدرآباد: جماعت اسلامی کے جنرل سیکرٹری لیاقت بلوچ‘ اسداللہ بھٹواورڈاکٹر معراج الہدیٰ تربیتی اجتماع سے خطاب کررہے ہیں

حیدرآباد( نمائندہ جسارت )متحدہ مجلس عمل اور جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے لیے کمیشن بنانے کا اعلان خوش آئند ہے تاہم اسکا چیئرمین حزب اختلاف سے ہونا چاہیئے ،نواز شریف کی ضمانت اور فیصلہ کی معطلی عدالتی معاملہ ہے ہمیں عدالتی فیصلوں کو تسلیم کرنا ہو گا،منی بجٹ میں نئے ٹیکسوں کا براہ راست اثر غریب و متوسط عوام پر پڑا ہےٰ نئی حکومت مہنگائی کا سونامی لے آئی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی ضلع حیدرآباد کے تربیتی اجتماع سے قبل مسجد قباء ہیر آباد حیدرآباد میں میڈیاکے سوالات کے جوابات دیتے ہو ئے کیا، اس موقع پر جماعت اسلامی سندھ کے سکریٹری اطلاعات مجاہد چنہ ، حیدرآباد کے امیر حافظ طاہر مجید اور دیگر بھی موجود تھے لیاقت بلوچ نے کہاکہ انتخابات 2018ء کے نتائج پر قوم کو تحفظات ہیں لیکن ہم نے جمہوریت کے استحکام اور پارلیمنٹ کی بہتری کے لیے ان نتائج کو قبول کیا ہے اس کے ساتھ ساتھ تمام ہی پارلیمانی جماعتوں کا مطالبہ تھا کہ اس پر پارلیمنٹ کا تحقیقاتی کمیشن بننا چاہیئے حکومت نے کمیشن بنانے کا اعلان کردیا ہے جو خوش آئند قدم ہے تاہم ابھی اسکے ٹی او آرز طے ہو نا ہیں انہوں نے کہاکہ اسپیکر قومی اسمبلی کے علاوہ سینیٹ کے چیئرمین سے بھی مشاورت ہونا چاہیئے اور دونوں ایوانوں پر مشتمل پارلیمانی کمیشن بنانا چاہیئے جو آزادانہ طریقہ سے دھاندلی کے الزامات کی تحقیقات اور انتخابی نتائج کا آڈٹ کرے تاہم اسکا کمیشن کا چیئرمین حزب اختلاف میں سے ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ نواز شریف ، مریم اور صفدر سزاؤں کی معطلی و ضمانت سے متعلق اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ عدالتی معاملہ ہے ہمیں عدالتی فیصلے کھلے دل سے تسلیم کرنا چاہییں اور یہ بھی نیب کا حق ہے کہ وہ اس فیصلہ کو عدالتِ عظمیٰ میں چیلنج کرے ہمیں عدالتی فیصلوں کو تضحیک و تنقید کا نشانہ بنانے سے گریز کرنا چاہیے یہی جمہوری رویہ ہے انہوں نے کہاکہ حکومت نے جو منی بجٹ پیش کیا ہے اسکا سارا نزلہ غریب عوام پر گرا ہے نئے ٹیکسوں کا براہ راست اثر غریب و متوسط عوام پر پڑا ہے گیس کی قیمتوں میں ہوش ربا اضافہ کیا گیا ہے جبکہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بھی اضافہ کیا جارہا ہے نئی حکومت مہنگائی کا سونامی لے آئی ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ