محرم الحرام، ایم اے جناح روڈ کراچی سیل کردیا گیا۔

165

محرم الحرام کے دوران جلوسوں کی سیکیورٹی یقینی بنانے کے لیے ایم اے جناح روڈ کو تین دن کے لیے سیل کر دیا گیا ہے۔ 

پولیس نے جلسے جلوسوں کی فول پروف سیکیورٹی کے لیے ایم اے جناح روڈ اور اس سے ملحقہ سڑکوں کو رکاوٹیں لگا کر ہر طرح کی ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا ہے۔ 

صوبائی حکومت کی ہدایت پر پولیس اوردیگر سیکیورٹی اداروں نے شہر قائد میں آٹھ، نو اور دس محرم الحرام کے دوران مرکزی جلوسوں کی نگرانی کے لیے سیکیورٹی پلان تشکیل دیا ہے۔ 

حکومت سندھ نے محرم الحرام کے دوران کراچی سمیت سندھ بھر میں موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی ہے جس کا نفاذ آٹھ سے دس محرم کے دوران ہوگا۔ محکمہ داخلہ سندھ نے اس ضمن میں نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا ہے۔

کراچی میں بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے نام سے موسوم ’ایم اے جناح روڈ‘ کا شمار شہر کی اہم ترین شاہراہوں میں کیا جاتا ہے جو مزار قائد سے شروع ہوکر ٹاور کھارادر پہ اختتام پذیر ہوتی ہے۔

ماضی میں بندرروڈ کے نام سے جانی جانے والی اس شاہراہ کو معاشی سرگرمیوں میں شہ رگ کی حیثیت اس لحاظ سے حاصل ہے کہ تجارتی وکاروباری سرگرمیوں کے بیشتر مراکز اس سے ملحقہ علاقوں میں ہی واقع ہیں۔

دوسری جانب سیکرٹری داخلہ سندھ قاضی کبیر کا کہنا ہے کہ حکومت سندھ نے کراچی میں 8، 9 اور 10 محرم کو موبائل فون سروس بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے،

کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں 8، 9 اور 10 محرم کو موبائل فون سروس بند رکھی جائے گی۔سیکرٹری داخلہ سندھ قاضی کبیر میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ عوام کی سہولت کیلئے شہر بھر میں موبائل سروس بند نہیں ہوگی، صرف جلوسوں کی گزرگاہوں اور اطراف میں سروس کو معطل کیا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ موبائل فون سروس صبح 7 تا رات 12 بجے تک بند رہے گی۔سیکرٹری داخلہ نے بتایا کہ حیدرآباد، شہید بے نظیرآباد، خیرپور اور لاڑکانہ میں بھی موبائل فون سروس بند رہے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شکارپور اور جیکب آباد میں بھی موبائل فون سروس بند رہے گی۔

Print Friendly, PDF & Email