بحیرہ روم پر پرواز کے دوران روسی طیارہ لاپتہ

180

روسی  وزارت دفاع کےمطابق  ایک  روسی آئی ایل ۔20 قسم کا فوجی طیارہ بحیرہ روم  پر پرواز کے دوران ریڈار سے غائب ہو گیا ۔

طیارے میں 14 فوجی بھی سوار تھے جو کہ  شام میں موجود روسی فوجی اڈے پر پہنچنے سے قبل   ہی اچانک ریڈار سے غائب ہوگیا ۔

  یہ بھی بتایا گیا ہے کہ  یہ طیارہ  اس وقت غائب ہوا جب علاقے میں  اسرائیلی فضائیہ کے 4 ایف سولہ طیارے شامی شہر لازکیہ پر  بمباری کر رہے تھےجبکہ  دوسری جانب  بحیرہ روم میں موجود ایک فرانسیسی فریگیٹ  بھی  اِسی علاقے پر    میزائل داغ رہا تھا ۔

روس کی خبررساں ایجنسی تاس نے کہا کہ ‘فلائٹ کنٹرول کے ریڈار پر ال-20 کا رابطہ شام کے لاذقیہ صوبے میں اسرائیل کے ایف-16 جیٹ طیاروں سے حملے کے دوران منقطع ہو گيا۔’

لاپتہ روسی طیارے پر سوار افراد کے بارے میں کوئی علم نہیں ہے جبکہ وزارت کے مطابق اس کی تلاش کا کام جاری کر دیا گیا ہے۔

دوسری جانب فرانس کے ایک فوجی ترجمان نے خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ہے کہ ‘فرانسیسی فوج نے اس حملے میں کسی طرح کی اپنی شمولیت سے انکار کیا ہے۔’

دریں اثنا اسرائیلی فوج نے اپنی فوج کے لاذقیہ صوبے میں کسی ٹھکانے کو نشانہ بنانے پر کسی قسم کا بیان دینے سے انکار کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ