نیٹو مخالف روسی جنگی حربوں کا جواب دیا جائے گا‘ مرکل

29

ویلنیوس (انٹرنیشنل ڈیسک) جرمن چانسلر انجیلا مرکل نے کہا ہے کہ یورپ کی مشرقی سرحدوں پر تعینات نیٹو افواج کے خلاف روسی ہائبرڈ جنگی حربوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس غرض سے جرمن فوج کی سائبر صلاحیتوں میں مزید بہتری لائی جانے کے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ انہوں نے دورہ لیتھوانیا کے دوران وہاں نیٹو مشن کے تحت تعینات جرمن فوجی دستوں سے خطاب کیا۔ جرمن چانسلر انجیلا مرکل نے ان حربوں کو ہائبرڈ وار فیئر کا نام دیا۔ یہ ایک جنگی حکمت ہوتی ہے، جس کے تحت دشمن نہ صرف روایتی جنگی حالات پیدا کرتا ہے بلکہ سیاسی وار فیئر اور سائبر حملے بھی کرتا ہے۔ مرکل نے کہا کہ ایسی بات نہیں کہ مغربی ممالک عسکری حربوں سے واقف نہیں ہیں۔ دوسری طرف روسی حکومت نے تمام الزامات کو مسترد کردیا۔ کریملن کا اصرار ہے کہ امریکی سرپرستی میں قائم عسکری اتحاد دراصل خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ میں تیزی پیدا کرنے کا باعث بن رہا ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس ہی برلن حکومت نے نیٹو مشن کے تحت لیتھوانیا میں 500 فوجیوں کو تعینات کیا تھا، جس کا مقصد روسی خطرات سے نمٹنا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.