مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کے ہاتھوں مزید 6 جونوان شہید، نعشوں کی بے حرمتی

204
مقبوضہ کشمیر:بھارتی فوجی نوجوان کو شہید کرنے کے بعد لاش کی بے حرمتی کررہے ہیں
مقبوضہ کشمیر:بھارتی فوجی نوجوان کو شہید کرنے کے بعد لاش کی بے حرمتی کررہے ہیں

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع کولگام کے علاقے چو گام میں مزید6 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا جبکہ بھارتی فوج نے انسانیت کی تمام حدیں پار کرلیں، ایک شہید نوجوان کی نعش کی بے حرمتی کرتے ہوئے قابض اہلکاروں نے زنجیروں سے باندھ کر سڑک پر گھسیٹنے کی وڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جس کے بعد انسانی حقوق کی تنظیموں اور انسانی قدروں پر یقین رکھنے والوں کی جانب سے بہیمانہ کارروائی پر بھارتی فوج پر شدید تنقید کی جارہی ہے ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض فوج نے 5نوجوانوں گلزار احمد پڈر ، فیصل احمد راتھر، زاہد احمد میر، مسرور احمد مولوی اور ظہور احمد لون کو ضلع کولگام کے علاقے چوگام میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔واقعے کے خلاف علاقے کے لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور زبردست احتجاجی مظاہرے کیے ۔ بھارتی فوج اور پولیس اہلکاروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے فائرنگ کی ، پیلٹ چلائے اور آنسو گیس کے گولے داغے جس کے نتیجے میں رؤف احمد نامی ایک او ر نوجوان شہید جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے۔ شدید زخمی نوجوانوں کو سرینگر کے اسپتالوں میں منتقل کیا گیا ہے۔ دریں اثنا نوجوانوں کی شہادت پر کولگام اور اسلام آباد کے اضلاع میں مکمل ہڑتال کی گئی۔قابض انتظامیہ نے کولگام اور اسلام آباد کے اضلاع میں موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس جبکہ مقبوضہ وادی میں ریل سروس معطل کر دی ۔ سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں نوجوانوں کے قتل اور لوگوں پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کے خلاف پیر کو مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔ میر واعظ عمر فاروق نے اپنے ایک ٹوئٹ میں تحریک آزادی کے ساتھ وابستگی کی پاداش میں کشمیری نوجوانوں کے قتل پر سخت تشویش کا اظہار کیا۔ حریت رہنماؤں اور تنظیموں فریدہ بہن جی ، ظفر اکبر بٹ، بیر سٹر عبدالمجید ترمبو، ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی اور حزب المجاہدین نے اپنے بیانات میں شہید نوجوانوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کیا۔ ادھر سوشل میڈیا پر وائرل ایک تصویر میں بھارتی فوجیوں کو جموں خطے کے ضلع ریاسی میں ایک نوجوان کی نعش کو ٹانگوں سے زنجیر باندھ کر سڑک پر گھسیٹتے ہوئے دکھایا گیا ہے جو قابض فوج کے غیر انسانی اور ظالمانہ چہرے کو ظاہر کرتا ہے۔یہ لاش ان 3 نوجوانوں میں سے ایک کی تھی جنہیں بھارتی فوجیوں نے جمعرات کے روز ریاسی کے علاقے جھاجر کوٹلی میں ایک پر تشدد آپریشن کے دوران شہید کیا تھا۔ بھارتی پولیس نے حریت رہنماؤں شبیر احمد ڈار اور مختار احمد وازہ کو سوپور اور اسلام آباد کے علاقوں سے گرفتار کر لیا۔ بھارتی فوجیوں نے ضلع پلوامہ کے علاقے بیگ پورہ میں رات کے وقت چھاپے کی ایک کارروا ئی کے دوران ممتاز آزادی پسند کارکن ریاض نائیکو کے قریبی رشتے داروں کے گھروں میں توڑ پھوڑ کی اور گھریلو اشیا لوٹ لیں۔جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر کے امیر عبدالحمید فیاض نے شوپیاں میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بھارت اور پاکستان پر زور دیا کہ وہ تنازع کشمیر کو کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق حل کرنے کے لیے مذاکراتی عمل کا آغاز کریں۔نئی دہلی کی بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں غیر قانونی طور پر نظر بند سینئر حریت رہنما شبیر احمد شاہ وڈیو لنگ کے ذریعے ہونے والی عدالتی سماعت کے دوران بیہوش ہو گئے ۔ شبیر احمد شاہ کی اہلیہ ڈاکٹر بلقیس نے جن کی بعد ازاں اپنے شوہر کے ساتھ مختصر ملاقات کرائی گئی کہا کہ جیل انتظامیہ کی طرف سے شبیر احمد شاہ کو طبی سہولیات فراہم نہ کیے جانے کی وجہ سے ان کی صحت خطرناک حد تک بگڑچکی ہے ۔لندن میں جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے ایک وفد نے اپنے چیئرمین راجہ نجابت حسین کی قیادت میں برطانیہ کے شیڈو وزیر خارجہ Fabian Hamiltonسے ملاقات کی اورانہیں مقبوضہ علاقے میں بھارتی ریاستی دہشت گردی سے آگاہ کیا۔
مقبوضہ کشمیر

Print Friendly, PDF & Email
حصہ