سرکاری اسپتالوں میں خواتین ایم ایل او نہ ہونے پر سندھ حکومت سے جواب طلب

27

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائیکورٹ میں سرکاری اسپتالوں میں خواتین میڈیکو لیگل افسران کی تعیناتی اور لیبارٹریز میں عدم سہولیات سے متعلق درخواست کی سماعت، عدالت نے صوبائی حکومت سے 24 اکتوبر تک تفصیلی جواب طلب کرلیا۔ سندھ ہائیکورٹ میں سرکاری اسپتالوں میں خواتین میڈیکل لیگل افسران کی تعیناتی اور لیبارٹریزمیں عدم سہولیات سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی عدالت میں درخواست گزار کا کہنا تھا کہ قتل ہونے والی خواتین کا پوسٹ مارٹم بھی مرد ایم ایل او
کرتے ہیں، سرکاری اسپتالوں میں لیڈی ایم ایل اوز کی تعیناتی ضروری ہے سرکاری لیبارٹریزمیں سہولیات بھی ناپید ہیں عدالت نے درخواست گزارکا مؤقف سنتے ہوئے صوبائی حکومت کوحکم دیا کہ سندھ حکومت لیڈی میڈیکو لیگل افسران کی تعیناتی سے متعلق جواب جمع کروائے اور سندھ میں ڈی این ای لیبارٹری کے قیام، ٹیسٹ کی سہولیات سے متعلق بھی جامع رپورٹ جمع کروائے عدالت نے مزید سماعت چوبیس اکتوبر تک سماعت ملتوئی کردی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.