سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس:ملزمان کے وکیل کاچشم دید گواہ پر جرح کے دوران تھپڑ

74

لاہور(نمائندہ جسارت )سانحہ ماڈل ٹان کیس کی سماعت کے دوران پولیس ملزمان کے ایک وکیل نے سانحہ کے گواہ محسن رسول کو انسداد دہشت گردی عدالت میں کمرہ عدالت کے اندر تھپڑ مار دیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کی سماعت جاری تھی،دوران سماعت ملزمان کے وکیل نے محسن رسول کو سانحہ کے چشم دید گواہ افتخار پر جرح کے دوران تھپڑ مار دیا،جس کے بعدمتاثرین اور ان کے وکلا کی جانب سے عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کر دیا گیا۔جواد حامد کا کہنا کہ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے وعدہ کیا تھا کہ ہمیں انصاف ملے گالیکن یہاں تو ہمیں تھپڑ مارے جا رہے ہیں،پولیس ملزمان کے وکیل کے ساتھ ایسے لوگ بھی عدالت آتے ہیں جو کیس میں وکیل نہیں،جارحانہ رویوں اور دھمکیوں سے متعلق متعدد بار جج کو آگاہ کر چکے ہیں۔یاد رہے چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثارنے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے متاثرین کو انصاف کی فراہمی میں تاخیرکانوٹس لیا تھا۔سانحہ ماڈل ٹاؤن میں شہید ہونے والی خاتون کی بیٹی بسمہ نے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار سے ملاقات کی تھی،ملاقات کے دوران بسمہ کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کو4برس ہو گئے ہیں لیکن ابھی تک ہمیں انصاف نہیں ملا،اس پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے یقین دہانی کرائی کہ آپ کو انصاف ضرور ملے گا، میرے ہوتے ہوئے ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.