توانائی کے نئے منصوبے درآمدی ایندھن پر شروع نہیں کریں گے، خسرو بختیار 

59

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات مخدوم خسرو بختیار نے کہا ہے کہ اقتصادی راہداری کے منصوبے مقررہ وقت پرمکمل کریں گے،ان میں دنیا بھر کے سرمایہ کار حصہ لیں،ایم ایل ون کی تکمیل سے ریلوے کی اسپیڈ 160 کلو میٹر فی گھنٹہ ہو جائے گی، توانائی کے نئے منصوبے درآمدی ایندھن پر شروع نہیں کریں گے۔اسلام آباد میں وفاقی وزیر منصوبہ بندی کی زیرصدارت چینی حکام کے ساتھ اقتصادی راہداری کے ترقیاتی جائزے کا 56واں اجلاس ہوا۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی خسرو بختیار نے کہا کہ سی پیک کے بارے میں میڈیا منفی پروپیگنڈا کررہا ہے، اقتصادی راہداری کے منصوبے مقررہ مدت میں مکمل کریں گے۔خسرو بختیار نے کہا کہ موٹروے اور اورنج ٹرین کے بجائے ایم ایل این ون زیادہ اہم ہے جس کے لیے 9 ارب ڈالر درکار ہیں۔انہوں نے کہا کہ سی پیک کے تحت نیا سوشل اکنامک ورکنگ گروپ بنایا ہے جب کہ چینی حکام سے ملاقات میں ایم ایل ون منصوبے میں سرمایہ کاری کے لیے تجاویز پیش کریں گے۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی کا کہنا تھا کہ گوادر کو مثالی منصوبہ بنائیں گے کیونکہ دنیا میں 80 فیصد تجارت بحری راستوں سے ہوتی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ