ایچ آرسی نے پی کیوآرکاڈیٹا صاف کرنے کی ہدایت کردی

34

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) ہائر ایجوکیشن کمیشن نے پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر یونیورسٹیوں کو یہ ہدایت کی ہے کہ پاکستان کوالیفکیشن رجسٹر (پی کیو آر) جو کہ اکتوبر2016میں شروع ہوا تھا، کے ڈیٹا کی صفائی کی جائے ۔ پی کیو آر پاکستان کوالیفکیشن فریم ورک کا حصہ ہے۔ پی کیو آر ایک آن لائن ڈیٹا بیس ہے جس میں تسلیم شدہ پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر جامعات اور ڈگری پروگراموں کے اندراج کے ساتھ ساتھ الحاق شدہ کالجوں اور ان کے پروگراموں کا بھی اندراج کیا گیا ہے۔ اگرچہ جامعات کی جانب سے بیشتر معلومات فراہم کر دی گئی ہیں مگر تاحال کچھ جامعات کے ڈگری پروگراموں کی معلومات نامکمل ہیں اور اسناد کے ٹائٹل کی مماثلت نہیں ہے ۔
جامعات کے وائس چانسلرز کو جاری کرہ ایک خط میں ہائر ایجوکیشن کمیشن نے وائس چانسلرز کو ہدایت کی ہے کہ پی کیو آر کے فوکل پرسنز اور متعلقہ اسٹاف کو بتائیں کہ پی کیو آر میں پہلے سے اندراج شدہ ڈیٹا کی صفائی کریں تاکہ وہ انفارمیشن جو دو دفعہ پی کیو آر کا حصہ بنائی گئی ہے یا کوئی ٹائپنگ کی غلطی ہے تواسے درست کرنے کے ساتھ ساتھ معلومات کو30ستمبر2018تک اپ ڈیٹ کر دیں ۔ اس خط میں کہا گیا ہے کہ گریجویٹس کو ڈگر یوں کی تصدیق کے دوران سہولت فراہم کرنے کی غرض سے ان کو درست معلومات کے اندراج کی اجازت دی گئی تھی ۔ گریجویٹس کی جانب سے اندراج کردہ معلومات کو ہائر ایجوکیشن کمیشن نے فزیکل تصدیق کے ذریعے منظور کیا تھا۔ پی کیو آر میں موجود ڈیٹا میں اسناد کے ٹائٹل میں غلطیاں اور ٹائپنگ کی غلطیوں کی بھی نشاندہی کی گئی ہے جس کی وجہ سے نہ صرف ڈگریوں کی تصدیق کے عمل میں دیر ہوتی ہے بلکہ ہائر ایجوکیشن کمیشن کے اسٹاف اور گریجویٹس کو بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مزید براں وائس چانسلرز کو لکھے گئے ایک اور خط میں ہائر ایجوکیشن کمیشن نے تسلیم کردہ جرنلز کی میعاد بڑھا دی ہے۔ یہ جرنلز فیکلٹی کی بھرتی، پروموشن، ہائر ایجوکیشن کمیشن کے منظور شدہ سپروائزر کی تقرری اور پی ایچ ڈی کی ڈگریوں کے اجراء جیسے معاملات میں اہمیت کے حامل ہیں۔
ہائرایجوکیشن کمیشن

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.