پیپلز پارٹی اور ن لیگ کانیب قوانین میں ترامیم پر اتفاق

25

اسلام آباد(صباح نیوز)اپوزیشن کی دونوں بڑی جماعتوں میں احتساب آرڈیننس میں ترامیم پر اتفاق ہوگیا ،چیئرمین نیب سے گرفتاری کا اختیار واپس لینے اور یہ اختیار عدالت کے سپرد کرنے کی تجویز پر وزارت قانون وانصاف سے رائے لینے کا فیصلہ کرلیا گیا ۔ عوامی نوعیت کے قوانین کی بہتری
کے لیے ضابطہ کار طے کیا جائے گا۔ آئینی وقانونی ماہرین کے مطابق بعض اداروں کے رولز آئین کے مطابق نہیں ہیں ۔ اس امر کا اظہار بدھ کو سینیٹ کی قانونی اصلاحات کے بارے میں خصوصی کمیٹی کے اجلاس کے دوران کیا گیا ہے ۔ اجلاس میں وزارت قانون کے مشیر جسٹس (ر)محمد رضاخان سمیت وزارت قانون کے حکام سابق سینئرپارلیمینٹرین قانون دان انور بھنڈرنے شرکت کی ۔ اجلاس کمیٹی کے کنوینئر فاروق ایچ نائیک کی صدارت میں ہوا۔سینیٹر جاوید عباسی نے کہا کہ پرویز مشرف کے دور میں نشانہ بنانے کے لیے آرڈیننس لایا گیا ،تمام جماعتوں کو نیب آرڈیننس کے بارے میں شکایات ہیں ماضی میں پارلیمانی احتساب کمیٹی میں کام ہوا تھا ۔ نیب کا بدعنوانی کے مقدمات کے حوالے سے دائرہ کار وسیع کرنے کی ضرورت ہے ۔ چھوٹی رقوم کے مقدمات کا اختیار نیب کے پاس نہیں ہونا چاہیے اس حوالے سے ایف آئی اے او رانسداد بدعنوانی کے دیگر ادارے موجود ہیں ، ریفرنس پر فیصلہ ہونے سے پہلے کسی پر الزام تراشی نہیں ہونی چاہیے ، ریفرنس دائر ہونے تک نیب کو گرفتاری کااختیار عدالت کی اجازت سے ہوناچاہیے۔ کمیٹی نے اتفاق کیا ہے آئندہ اجلاس میں وزیر قانون وانصاف فروغ نسیم کو مدعو کرلیا گیا ہے ۔ اس بات پر بھی اتفاق کیا ہے کہ نیب عدالتوں کو برقرار رکھنا چاہیے اس حوالے سے چھیڑ چھاڑ کی ضرورت نہیں ہے ۔ تجویز کے تحت میڈیا سمیت کسی بھی سرکاری ادارے سے عوام کو کسی بھی قسم کا جانی مالی ، املاک یاعزت پر آنے والے حرف پر ہرجانہ ادا کیا جائے گا۔علاوہ ازیں سابق صدر آصف علی زرداری اور انکی بہن فریال تالپور کو منی لانڈرنگ کیس میں جے آئی ٹی کی تشکیل کے بارے میں تاحال باضابطہ طور پر آگاہ نہیں کیا گیا۔بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس میں قانونی اصلاحات سے متعلق سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کے اجلاس کے بعد کمیٹی کے چیئرمین سینیٹر فاروق ایچ نائیک نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے تصدیق کی کہ انکے موکلین کے حوالے سے منی لانڈرنگ کیس میں جے آئی ٹی بنانے کے بارے میں باضابطہ طور پر آگاہ کیا ہے نہ موکلین کو کوئی نوٹسز تاحال موصول ہوئے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ