حسن صہیب مراد کا نمازِ جنازہ مولانا طارق جمیل نے پڑھایا

95

لاہور(نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے معروف اسکالر ، ماہر تعلیم ، آئی ایل ایم ٹرسٹ کے بانی اور یو ایم ٹی کے چیئرمین ڈاکٹر حسن صہیب مراد کی نماز جنازہ کے موقع پر مرحوم کے اہل خانہ اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے ملک میں تعلیم کو عام کرنے کے لیے مرحوم کی گرانقدر خدمات کو سراہا اور کہاکہ ڈاکٹر حسن صہیب مراد نے تعلیمی میدان میں جو خدمات سر انجام دی ہیں ، انہیں
مدتوں یاد رکھا جائے گا ۔ ملک سے جہالت کے اندھیروں کو ختم کرنے اور ایک حقیقی فلاحی معاشرے کے قیام کے لیے تعلیم کے فروغ کی طرف خصوصی توجہ دینا اورا سکولوں سے باہر ڈھائی کروڑ بچوں کو تعلیمی اداروں میں لانا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ کوئی قوم تعلیم کے بغیر ترقی نہیں کر سکتی ۔ ڈاکٹر حسن صہیب مراد نے اس حقیقت کو پلے باندھ لیاتھا ۔ انہوں نے زندگی کے ابتدائی ایام سے ہی تحریک اسلامی کو اپنا آئیڈیل بنایا اور اصلاح معاشرہ کے لیے تعلیم و تعلم کے میدان کا انتخاب کیا ۔ نماز جنازہ معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے پڑھائی ، نماز جنازہ میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی جن میں بڑی تعداد ان کے شاگرد وں کی تھی ۔ بعد ازاں ڈاکٹر حسن صہیب مرا د مرحوم کو یونیورسٹی کے باغیچے میں سپرد خاک کردیا گیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کی یہ ذمے داری ہے کہ سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت زار کو بدلے اور تعلیمی معیار کو بہتر بنائے ۔ عام آدمی کو تعلیم اور علاج کی بہتر سہولتیں فراہم کرنے ،غربت ، مہنگائی ، بے روزگاری کے خاتمے ، پینے کے صاف پانی کی فراہمی جیسے بنیادی مسائل کے حل کی طرف حکومت کو فوری توجہ دینی چاہیے ۔انہوں نے کہاکہ اب عوام حکومت کی طرف دیکھ رہے ہیں ۔ دعوؤں اور نعروں کا وقت گزر چکاہے اب حکومت کو اپنی کارکردگی سے ثابت کرنا ہوگا کہ انہوں نے الیکشن سے پہلے اور الیکشن کے دوران عوام سے جو وعدے کیے تھے ، ان کو پورا کرنے کی اہلیت رکھتی ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ