لیبیا میں انسانی اسمگلر اقوام متحدہ کے عملے کا بھیس بدل کر یورپ پہنچنے کے خواہشمند مہاجرین کو ہدف بنا رہے ہیں

33

طرابلس (انٹرنیشنل ڈیسک) لیبیا میں انسانی اسمگلر اقوام متحدہ کے عملے کا بھیس بدل کر یورپ پہنچنے کے خواہشمند مہاجرین کو ہدف بنا رہے ہیں۔ مہاجرین سے متعلق اقوام متحدہ کا ادارہ یو این ایچ سی آر اس معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے۔ یو این ایچ سی آر کا کہنا ہے کہ اسے معتبر ذرائع سے ایسی رپورٹس ملی ہیں کہ لیبیا میں انسانی اسمگلر اس عالمی ادارے کے کسی رکن کا روپ دھار کر ان مقامات پر دیکھے گئے ہیں، جہاں پر مہاجرین کو جہازوں سے اتارا جاتا ہے۔ انسانوں کی اسمگلنگ میں ملوث یہ افراد تارکین وطن کو یورپ لے جانے کا جھانسہ دیتے ہیں۔ مہاجرین کے حوالے سے خبریں فراہم کرنے والے یورپی ادارے انفو مائیگرنٹس نے کہا ہے کہ یو این ایچ سی آر کے مطابق اُسے یہ رپورٹ ایسے مہاجرین سے ملی ہے ، جنہیں مبینہ طور پر لیبیا میں اسمگلروں کے ہاتھوں فروخت کر کے تشدد اور زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ عالمی ادارہ مہاجرت کے ترجمان بابر بلوچ نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ابھی یہ واضح نہیں کہ اقوام متحدہ کا جعلی نمائندہ بننے والے اسمگلرز، مہاجرین کو جھانسہ دینے میں کامیاب ہوئے یا نہیں۔ بابر بلوچ کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے چھان بین کی جا رہی ہے۔ عالمی ادارہ مہاجرت کا کہنا ہے کہ اسے ملنے والی رپورٹوں کے مطابق مہاجرین پر شدید مظالم ڈھائے جاتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ