تاجر برادری انتخابات میں بی ایم جی کو ہی کامیاب کرائے گی صدر کراچی چیمبر

124

چیمبر کا کام رضاکارانہ طور پر سرانجام دے رہے ہیں

کسی کے کہنے پر نہیں چل رہے،اس بات کا کریڈٹ سراج قاسم تیلی اور ان کی ٹیم کو جاتا ہے

بزنس مین گروپ کی گزشتہ 20 سے جاری جدوجہد، عوامی خدمت کے باعث ہے

مفسر عطا ملک سے جسارت کی خصوصی گفتگو

کراچی: کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر مفسر عطا ملک نے کہا ہے کہ پچھلے بیس سال سے جاری بزنس مین گروپ کی عوامی خدمت پالیسی کے باعث انشاء اللہ اس سال کراچی چیمبر میں ہونے والے انتخابات میں ہمیں بھرپور کامیابی حاصل ہوگی کیونکہ کراچی شہر کی پوری تاجر برادری یہ اچھی طرح جانتی ہے کہ جس نیک نیتی اور محنت سے بی ایم جی نے مسائل کے حل کے لئے تاجروں و صنعتکاروں کی خدمت کی کوئی اور کر ہی نہیں سکتا۔

مفسر ملک نے کہا کہ بی ایم جی کی شفاف پالیسیوں کی وجہ سے کراچی چیمبر جو 1998 میں شدید مالی بحران کا شکار تھا اور بنکوں کے قرضوں پر چلتا تھا اسے ایک فعال اور خود مختار ادارہ بنا دیا گیا جسے نہ صرف ملک کا سب سے بڑا چیمبر ہونے کا اعزاز حاصل ہے بلکہ اس کا شمار دنیا کے آٹھ بڑے چیمبروں میں ہوتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں کے سی سی آئی کے صدر نے کہا کہ چند عناصر کی جانب سے یہ غلط تاثر دیا جارہا ہے کہ کے سی سی آئی کے عہدیداران کوفیصلے کرنے کے کوئی اختیارات حاصل نہیں جو سراسر غلط اور بے بنیاد الزام ہے۔ میں کراچی چیمبر کے صدر کی حیثیت سے اس قسم کے تمام الزامات کو سختی سے مسترد کرتا ہوں۔ پچھلے بیس سالوں کے دوران کراچی چیمبر کے جتنے بھی صدور رہے ہیں مجھے یقین ہے کہ اُن سب کا بھی یہی موقف ہوگا جو میرا ہے کہ ہم بزنس مین گروپ سے تعلق رکھنے والے کے سی سی آئی کے عہدیداران کو کراچی چیمبرکے امور چلانے کے مکمل اختیارات حاصل رہے۔گزشتہ 20 سالوں میں کراچی چیمبر کو حاصل ہونے والی کامیابیاں آزادی اور اختیارات کے بغیر ممکن نہیں ہوسکتی تھیں ۔

انھوں نے کہا کہ بی ایم جی انتہائی قابل احترام اور اچھی ساکھ رکھنے والے کاروباری افراد کی ایک ٹیم ہے جو کراچی میں تجارت و صنعت کے فروغ کے لیے کام کر رہی ہے۔ ہم یہ کام رضاکارانہ طور پر سرانجام دے رہے ہیں اورہم کسی کے کہنے پر نہیں چل رہے۔اس بات کا کریڈٹ سراج قاسم تیلی اور ان کی ٹیم کو جاتا ہے کہ انھوں نے نہ صرف کے سی سی آئی کو مالی طور پر مستحکم ادارہ بنایا جو اس قابل بنا کہ اپنے مالی وسائل سے کراچی چیمبر کی نئی عمارت کی تعمیر کے لئے کلفٹن کے علاقے میں اراضی خرید سکا اور ہم نے کسی سے کوئی امداد نہیں مانگی۔

انھوں نے کہا کے سی سی آئی نے بی ایم جی اور سراج قاسم تیلی کی رہنمائی میں کراچی کی تاجروصنعتکار برادری کی ہر مشکل وقت اور بحرانوں میں سب سے آگے رہ کر مدد کی ۔ اس سلسلے میں انھوں نے حوالہ دیا کہ 2009 میں کراچی میں یوم عاشورہ کے موقع پر ہونے والے بم دھماکے کے بعد بولٹن مارکیٹ اور ایم اے جناح روڈ کے شاپنگ سینٹرز کو آگ لگانے کے واقعے میں تاجروں نے اپنا سب کچھ کھو دیا تھا ایسے میں کے سی سی آئی نے سراج قاسم تیلی کی قیادت میں تاجروں او ر مارکیٹوں کی بحالی کا بیڑہ اٹھایا اور اتنے بڑے ٹاسک کو پورا کرنے کے لیے سراج قاسم تیلی کی کوششوں سے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے فنڈز حاصل کیے گئے۔

انھوں نے کہا کہ کے سی سی آئی گزشتہ 15 سالوں سے کامیابی کے ساتھ ’’ مائی کراچی ‘‘ جیسی بڑی نمائش منعقد کر رہا ہے جو کسی بھی چیمبر کی جانب سے منعقد کی گئی سب سے بڑی نمائش ہے ۔جب کراچی سیاسی دنگا فساد اور اندھیروں میں ڈوبا ہوا تھا تو ایسے وقت میں سراج قاسم تیلی نے کراچی کو دوبارہ روشنیوں کا شہر بنانے اور کاروباری سرگرمیاں بحال کرنے میں اس نمائش کے ذریعے پہل کی۔

160
مفسر ملک نے مزید کہا کہ2016 میں کراچی کی ٹمبر مارکیٹ میں آتشزدگی کے واقعہ میں متعدددکانیں اور گودام جل کر راکھ ہوئے۔ایک بار پھر کے سی سی آئی اور بی ایم جی اینز ٹمبر مارکیٹ کے متاثرہ تاجروں کو بچانے کے لیے آگے آئے ۔ سراج قاسم تیلی کی کوششوں سے سندھ حکومت سے فنڈز حاصل کیے گئے اور کم سے کم ممکنہ وقت میں بحالی کا کام مکمل کیا گیا۔ کے سی سی آئی اور بی ایم جی نے قدرتی آفات، سیلاب اور زلزلے کے وقت قومی فریضہ سمجھتے ہوئے متاثرین کو بچانے اور ان کی بحالی کے لیے بڑھ چڑھ کر کام کیا۔

مفسر ملک کے مطابق یہ سب اور دیگر کامیابیاں سراج قاسم تیلی کی قیادت اور بصیرت اور ان کی مخلص ٹیم کی بدولت ہی ممکن ہوئیں۔کراچی کی تاجر و صنعتکار برادری کی واضع اکثریت بی ایم جی کے چیئرمین سراج قاسم تیلی کی قیادت پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کرتی رہی ہے ۔ ہماری لگن، خدمات اور کراچی کی عوام سے کئے گئے انفراسٹرکچر، سیکیورٹی اور کاروباری ماحول کی بحالی کے عزم کے مدنظر کراچی کی تاجر وصنعتکار برادری کے سی سی آئی کے آ نے والے انتخابات میں بی ایم جی کی بھرپور حمایت کرنے کے لئے متحد رہے گی۔

آخر میں مفسر ملک نے بزنس مین گروپ ، سراج قاسم تیلی، اور کراچی چیمبر کے خلاف مخالف گروپ اور ان کو سپورٹ کرنے والوں کی جانب سے سوشل میڈیا پر جاری سازشوں اور الزامات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ تمام تر سازشیں اور الزامات الیکشن کے دن مٹی میں مل جائیں گے اور یہ سارے عناصر جو اب اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئے ہیں منہ کی کھائیں گے جب بزنس مین گروپ انشاء اللہ بھاری اکثریت سے انتخابات میں کامیابی حاصل کرے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ
mm
قاضی جاوید سینئر کامرس ریپورٹر اور کامرس تجزیہ، تفتیشی، اور تجارتی و صنعتی،معاشی تبصرہ نگار کی حیثیت سے کام کرنے کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں ۔جسارت کے علاوہ نوائے وقت میں ایوان وقت ،اور ایوان کامرس بھی کرتے رہے ہیں ۔ تکبیر،چینل5اور جرءات کراچی میں بھی کامرس رپورٹر اور ریڈیو پاکستان کراچی سے بھی تجارتی،صنعتی اور معاشی تجزیہ کر تے ہیں qazijavaid61@gmail.com