دفترخارجہ نے اسحاق ڈار کو واپس لانے میں بے بسی ظاہر کردی

167

اسلام آباد ( آ ن لائن ) سابق وزیر خزانہ اور عدالت عظمیٰ کو مطلوب اسحاق ڈار کی لندن سے واپس لانے کیلیے دفترخارجہ نے اپنی بے بسی ظاہر کردی ہے اور کہا ہے کہ پاسپورٹ منسوخ کرنے سے اسحاق ڈار کو آسانی سے سیاسی پناہ مل جائے گی۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار کے معاملے میں وفاقی حکومت نے اسحق ڈار اور اسکی اہلیہ کے سفارتی پاسپورٹ منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔اس سلسلے میں وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل آف امیگریشن اینڈ پاسپورٹ کو لکھے گئے خط پر عمل درآمد کردیا گیا ہے۔6 ستمبر کو ارسال کیے گئے خط کے مطابق حکام نے ڈی جی پاسپورٹ سے درخواست کی ہے کہ اسحٰق ڈار اور ان کی اہلیہ تبسم اسحٰق کا پاسپورٹ منسوخ کیا جائے، کیونکہ انہیں ملکی عدالتوں میں پیش نہ ہونے کے سبب ’بلیک لسٹ‘ کیا جاچکا ہے۔ ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ حکومت پاکستان اس معاملے میں مزید کچھ نہیں کرسکتی۔ پاکستانی پاسپورٹ منسوخ ہونے کے بعد اسحق ڈار برطانیہ میں سیاسی پناہ کیلئے درخواست دائر کرسکتے ہیں ، جس پر اسے سیاسی پناہ ملنے کے بعد وہاں رہ سکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر اسحق ڈار نے کسی دوسرے ملک سفر کرنا ہوگا تو وہاں کے پاسپورٹ کیلیے درخواست دے سکتے ہیں۔ برطانوی پاسپورٹ ملنے کی صورت میں وہ دوسرے ممالک میں جاسکتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ