آر ٹی ایس پر نادرا کی رپورٹ الیکشن کمیشن کو ارسال

40

اسلام آباد (اے پی پی) آر ٹی ایس پر نادرا کی رپورٹ الیکشن کمیشن کو بھجوا دی گئی جس میں قرار دیا گیا ہے کہ تھری جی کی عدم دستیابی، بیشتر عملے کی ٹیکنالوجی کے استعمال میں مہارت نہ ہونے اور پریزائیڈنگ افسران کی اسمارٹ فون سے کم علمی اس نظام کی ناکامی کی وجہ بنی۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ ابتدا میں آر ٹی ایس سے نتائج کی آمد جاری تھی، 25 جولائی کو آر ٹی ایس ٹھیک کام کر رہا تھا، نادرا نے عالمی معیار کا بیک اپ تیار کیا تھا، ڈیٹا فیڈ کرنے کا اختیار ریٹرننگ افسر اور اسسٹنٹ ریٹرننگ افسر کو حاصل تھا۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ کمیشن کے اکثر عملے کے پاس اسمارٹ فون نہیں تھے، موبائل چارجنگ اور پیکیجز بھی سسٹم کی راہ میں رکاوٹ بنے۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم اور رزلٹ مینجمنٹ سسٹم (آر ایم ایس) میں کوئی مماثلت نہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ رات 2 بجے آر ٹی ایس پر دباؤ بڑھا۔ الیکشن کمیشن نے آر ٹی ایس کو بائی پاس کرنے کے احکامات دیے۔ نادرا نے تھری جی کی عدم دستیابی کو بھی نتائج کی ترسیل میں رکاوٹ قرار دیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ