امریکا چاہتا ہے پاکستان افغان طالبان پر اثر ورسوخ استعمال کرے،دفتر خارجہ

83

اسلام آباد ( آن لائن )ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ ا مریکا چاہتا ہے کہ پاکستان افغانستان میں امن و استحکام اور وہاں طالبان کے ساتھ بات چیت کے لیے اپنا اثرورسوخ استعمال کرے۔ آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ نئی حکومت قیام کے بعد بیرونی ممالک کے وفود کا دورہ پاکستان معمول کا حصہ ہے،چین،امریکا،ایران اور سعودی عرب کے وفود کے ساتھ باہمی تعلقات پر بات چیت ہوئی ، فالو اپ ملاقاتوں کے دوران ان تعلقات کی نوعیت واضح ہوگی،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی چند روز میں افغانستان کا دورہ کررہے ہیں،دورے میں پاکستان افغانستا ن سیاسی وعسکری معاملات کے علاوہ دیگر مسائل کے حل کے لیے لائحہ عمل پر بات چیت کی جائے گی،دیگر ممالک کے ساتھ بڑے منصوبوں پر بات چیت کرنا پاکستان کی اولین ترجیح ہے۔علاوہ ازیں سابق سینئر سفارتکار وحید الحسن کا کہنا ہے کہ اہم ممالک کے سینئر رہنماؤں کا پاکستان کا دورہ خوش آئندہے،یہ بات زیادہ اہم ہے کہ ان ممالک کے پاکستان کے ساتھ تعلقات میں کیا تبدیلی آتی ہے، ڈونلڈ ٹرمپ کے ہوتے تعلقات میں کوئی تبدیلی نظر نہیں آتی، امریکی حکام کی جانب سے پاکستان پر مزید دباؤ بڑھانے کی کوشش کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ