قومی اسمبلی میں ٹف ٹائم کی تیاری،اپوزیشن نے مشترکہ احتجاج کی حکمت عملی تیار کرلی

47

اسلام آباد(صباح نیوز)مبینہ انتخابی دھاندلی، مہنگائی اور دیگر عوامی معاملات پر اپوزیشن جماعتوں نے قومی اسمبلی میں مشترکہ احتجاج کی حکمت عملی پر ’’خاموش مفاہمت‘‘ہوگئی ۔حکومت پر سخت دباؤ ڈالنے کیلیے مشترکہ احتجاج کیا جائیگا۔ اپوزیشن ذرائع کے مطابق ن لیگ، پیپلزپارٹی ،متحدہ مجلس عمل اور دیگر ہم خیال جماعتیں قومی اسمبلی کے آئندہ سیشن میں اہم عوامی مطالبات بالخصوص مبینہ انتخابی دھاندلی کے خلاف شدید احتجاج کریں گی ۔ حالیہ دنوں میں اپوزیشن جماعتوں میں رابطے بھی ہوئے ہیں۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق قومی اسمبلی کا آئندہ اجلاس محرم الحرام کے بعد 25ستمبر سے شروع ہوگا۔ سیشن کے اجلاس کا ایجنڈا بزنس ایڈوائزری کمیٹی میں طے کیا جائیگا۔ یاد رہے کہ دونوں بڑی اپوزیشن جماعتیں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے انتخابی دھاندلی کی تحقیقات کیلیے پارلیمانی کمیشن قائم کرنے سے متعلق کردار ادا کرنے کا مطالبہ کرچکی ہیں ۔ ان معاملات پر اپوزیشن جماعتوں نے مکمل ہم آہنگی پائی جاتی ہے جس کا اظہار قومی اسمبلی کے آئندہ سیشن میں بھی کیاجائے گا۔ ذرائع نے یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ قومی اسمبلی کے اجلاس سے قبل اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ مشاورتی اجلاس متوقع ہے ،جبکہ اسپیکر قومی اسمبلی کی طرف سے بھی پارلیمانی جماعتوں کے نمائندوں کا اجلاس طلب کیے جانے کا امکان ہے ۔ اپوزیشن کے مشترکہ احتجاج کے سلسلے میں غیر اعلامیہ مفاہمت کا دعویٰ کیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ