حکومت کے ابتدائی 20 روز کے اقدامات نے عوام کو سخت مایوس کیا،معراج الہدی

79
کراچی :امیر جماعت اسلامی سندھ معراج الہدیٰ صدیقی ضلعی امرا سے خطاب کر رہے ہیں 
کراچی :امیر جماعت اسلامی سندھ معراج الہدیٰ صدیقی ضلعی امرا سے خطاب کر رہے ہیں 

کراچی( اسٹاف رپورٹر )امیر جماعت اسلامی سندھ ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی وزیر اعظم عمران خان کے ملک سے مہنگائی، کرپشن اور غربت کے خاتمے سمیت ریاست مدینہ بنانے کے ایجنڈے کی مکمل حمایت اور بھرپور تعاون کرنے کے لیے تیار ہے کیونکہ ملک کو ان سنگین مسائل سے نجات دلانا اور ایک جمہوری، فلاحی اوراسلامی ریاست کا قیام ہر شہری کا خواب ہے مگر پی ٹی آئی کے پہلے 20 دنوں میں بجلی و گیس اورکھاد کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافے سے لے کر ایک
قادیانی مبلغ عاطف میاں کو اقتصادی مشاورتی کونسل کاکا رکن بنانے تک کے اقدامات سے قوم کوسخت مایوسی ہوئی ہے۔ امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق اکتوبر کے پہلے ہفتے سندھ کا تنظیمی دورہ جبکہ 9 اور 10 محرم الحرام کو جماعت اسلامی کے تحت اجتماعات اور ضلعی تربیت گاہیں منعقد کی جائیں گی۔ جن سے مرکزی و صوبائی قائدین اور علما کرام خطاب کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو قبا آڈیٹوریم میں جماعت اسلامی سندھ کے ضلعی امرا کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔ اجلاس سے صوبائی جنرل سیکرٹری ممتاز حسین سہتوایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا جبکہ صوبائی نائب امرا، نائب قیمین و دیگر ذمے داران بھی موجود تھے۔ ضلعی ذمے داران نے ملٹی میڈیا کے ذریعے اپنے اپنے اضلاع کی سیاسی، تنظیمی دعوتی رپوٹس پیش کیں۔ ڈاکٹر معراج الہدیٰ نے مزید کہا کہ قادیانی مبلغ کو اقتصادی مشاورتی کونسل سے ہٹانا حکومت کا ایک اچھا اقدام دیر آید درست آید کے مترادف ہے مگر وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کی جانب سے علما کرام سمیت عاشقان رسولؐ کو انتہا پسند قرار دینا خود چغلی کھاتا ہے کہ حکومت کے عزائم کچھ اور ہیں۔ جماعت اسلامی جہاں حکومت کے اچھے اقدامات کی حمایت اور تعاون کرے گی وہاں پر ملک کے نظریاتی تشخص کو مٹانے خاص طور پر عقیدہ ختم نبوت اور تحفظ ناموس رسالت ؐ قانون پر کوئی آنچ نہیں آنے دے گی۔ حکومت کے ہر غیر آئینی ، غیر اسلامی اور غیر اخلاقی قدم کی بھرپور مخالفت کرے گی۔ جماعت اسلامی نے ہمیشہ عقیدہ ختم نبوت سمیت نظریاتی سرحدوں کی حفاظت کی ہے۔ بانی جماعت اسلامی سید ابوالاعلیٰ مودودیؒ پہلے آدمی ہیں کہ جس کو ختم نبوت کا موقف پیش کرنے پر سزائے موت سنائی گئی۔ جماعت اسلامی آج بھی اپنے مشن کو جاری رکھے ہوئے ہے۔انہوں نے ذمے داران کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی کا یہ کام اللہ سے محبت اور اس کے رسولؐ سے عشق کرنے کا کام ہے۔ درست وژن اور اخلاص کے ساتھ آگے بڑھیں گے تو کامیابی آپ کے قدم چومے گی۔ اللہ کسی کی محنت کو ضائع نہیں کرتا۔ یہ دعوت کا کام کسی نمود و نمائش و چالاکی سے نہیں بلکہ ایثار و قربانی اور تقویٰ کے ذریعے ہی آگے بڑھے گا یہی جماعت اسلامی کی پہچان ہے۔ اگر آپ نے اس کام کو اسی اسپرٹ کے ساتھ کیا تو زمین پر کوئی خلائی مخلوق آپ کا راستہ نہیں روک سکتی۔ صوبائی امیر نے اپنے 6 سالہ ذمے داری کے دوران صوبائی ٹیم سمیت ضلعی امرا کے بھرپور تعاون پر شکریہ ادا کیا۔ یاد رہے کہ ڈاکٹر معراج الہدیٰ کی امارت کے دوسرے سیشن کی مدت 31 اکتوبر 2018ء تک ہے۔ دستوری ترمیم کے بعد ان کو تسلسل کے ساتھ تیسری مدت کے لیے امیر منتخب نہیں کیا جاسکتا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ