نایومی اساکا گرینڈ سلم جیتنے والی جاپان کی پہلی خاتون

57

 

سید پرویز قیصر

نایومی اساکا نے سابق عالمی نمبر ایک امریکا کی سرینا ولیمس کو6-2 اور6-4 سے شکست دیکر سال کی آخری گرینڈ سلم امریکی اوپن میں خواتین کا سنگلز ٹائٹل اپنے نام کیا اور وہ کوئی گرینڈ سلم ٹائٹل جیتنے والی جاپان کی پہلی کھلاڑی بنیں۔ انہوں نے سیمی فائنل میں امریکا کی میڈیسن کیز کو6-2 اور6-4 سے شکست دیکر پہلی مرتبہ کسی گرینڈ سلم کے فائنل میں جگہ بنائی تھی۔
نایومی اساکا کے پاس امریکا اور جاپان دونوں کی شہریت ہے مگر ان کے والد نے انہیں جاپان ٹینس کے ساتھ رجسٹررڈ کیا تاکہ وہ جاپان کا نام روشن کریں اور انہوں نے 20 سال کی عمر میں ایسا کارنامہ انجام دیا جو ان سے پہلے انکے ملک کے کسی کھلاڑی نے انجام نہیں دیا تھا۔
آج خواتین ٹینس میں نئی رینکنگ جاری ہوگی تو ان کا رینکنگ میں7واں نمبر ہوگا۔ ابھی تک کوئی جاپانی کھلاڑی عالمی رینکنگ میں اس مقام پر نہیں پہنچی۔ اس سے پہلے جاپان کی خاتون کھلاڑی کی سب سے اچھی رینکنگ8 تھی جوایائی سوگی یاما نے 9 فروری2004 کو حاصل کی تھی۔
پیشہ ورانہ ٹینس کا آغاز1968 میں ہوا تھا اس وقتسے اب تک 14 ممالک کے کل51 کھلاڑیوں نے امریکی اوپن میں خواتین کا سنگلز ٹائٹل جیتا ہے۔ سب سے زیادہ ٹائٹل امریکی کھلاڑیوں نے جیتے ہیں۔ میزبان ملک سے تعلق رکھنے والی25 کھلاڑیوں نے ایسا کیا ہے۔ امریکا کی بیلی جین کنگ نے1971 میں پہلی مرتبہ ایسا کیا تھا۔ جرمن سے تعلق رکھنے والی 6کھلاڑیوں نے امریکی اوپن میں خواتین کا سنگلز ٹائٹل جیتا ہے۔ پہلی مرتبہ ایسا اسٹیفی گراف نے1988 میں کیا تھا۔ جسٹین ہینن نے2003 میں پہلی مرتبہ یہ ٹائٹل اپنے نام کیا تھا۔ ابھی تک بلجیم کی کھلاڑیوں نے 5مرتبہ یہ ٹائٹلاپنے نام کیا ہے۔آسڑیلیا کی 4 کھلاڑیوں نے امریکی اوپن میں خواتین کے سنگلز پر قبضہ جمایا ہے جس میں پہلی مرتبہ ایسا مارگریٹ کورٹ نے 1969 میں کیا تھا۔
جس روسی کھلاڑی نے پہلی مرتبہ امریکی اوپن میں خواتین کا سنگلز ٹائٹل حاصل کیا تھا وہ سوٹلانا کوزنٹسوا تھی۔ انہوں نے2004 میں ایسا کیا تھا ۔ انکے بعد ایک اور روسی کھلاڑی نے یہ ٹائٹل جیتا تھا۔
برطانیہ کی صرف ایک کھلاڑی نے امریکی اوپن میں خواتین کا سنگلزٹائٹل جیتا ہے۔ وہ اوپن ایرا یعنی 1968 میں ایسا کرنے والی پہلی خاتون تھیں۔ انکے بعد برطانیہ سے تعلق رکھنے والی کوئی اور کھلاڑی ایسا کرنے میں کامیاب نہیں ہوئی ہیں۔
ارجن ٹائنا کی گبریلا سباتینی نے1990 میں یہ ٹائٹل جیتا تھا۔ 1991 میں یوگوسلاویہ کی مونیکا سیلیز نے امریکی اوپن جیتی تھی۔ ایک سال بعد انہوں نے کامیابی کے ساتھ تائٹل کا دفاع کیا تھا مگر اس وقت یوگو سلاویہ کے ٹکڑے ہوگئے تھے اور وہ سربیا کی کھلاڑی بن گئیں تھیں۔ چیکو سلواکیہ کی ہانا مانڈلی کوا نے1985 میں، اسپین کی ارنتاکسا سانچییز وکاریو نے 1994 میں اور سوٹزر لینڈ کی مارتینا ہنگس نے 1997 میں امریکی اوپن میں خواتین کی سنگلز ٹرافی پر اپنا اور اپنے ملک کا نام تحریر کرایا تھا۔
نایومی اوساکا نے2013 میں پیشہ ورانہ ٹینس میں قدم رکھا تھا اور اب تک صرف2ٹائٹل جیتی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ