یو ایس اوپن ٹینس فائنل میں سرینا ولیمز کی امپائر پرتنقید

54

نیویارک(جسارت نیوز) امریکی اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے فائنل میں امریکی ٹینس کھلاڑی سرینا ولیمز نے جاپانی حریف ناؤمی اوساکا کے ہاتھوں شکست پر امپائر پر بھڑک اٹھیں اور انہیں چور قرار دے دیا۔ نیویارک میں ہونے والے گرینڈ سلام ویمنز سنگلز فائنل میچ میں جاپان کی ناؤمی اوساکا نے سرینا کو 2۔6 اور 4۔6 سے اپ سیٹ شکست دی اور جاپان کی پہلی گرینڈ سلام چیمپئن بن گئیں۔ کھیل کے دوران سرینا کے کوچ کی جانب سے انہیں اشارے کرنے پر امپائر نے کوڈ وائلیشن دی تو سرینا بھڑک اٹھیں جس سے ان کے حریف کو پوائنٹ مل گیا۔ امپائر نے سرینا پر الزام عائد کیا کہ وہ میچ کے دوران کوچ سے اشارے لے رہی ہیں جس کی اجازت نہیں جبکہ سرینا نے اس کی تردید کردی، ان کا کہنا تھا کہ وہ کبھی چیٹنگ نہیں کرتیں اور ایسی جیت سے وہ ہارنے کو ترجیح دیتی ہیں۔ بعد ازاں دوسرے سیٹ میں سرینا نے غصے میں آکر زمین پر ریکٹ پٹخ دیا جس پر انہیں پنالٹی کا بھی سامنا کرنا پڑا اور یوں ان کی حریف کو ایک اور پوائنٹ ملا۔ اس پر سرینا نے امپائر کو جھوٹا اور چور قرار دے دیا اور میچ کے دوران ہی کہا کہ انہوں نے مرد کھلاڑیوں کے میچز بھی دیکھیں ہیں، وہ اس سے زیادہ کچھ کہہ دیتے ہیں لیکن انہیں کچھ نہیں کہا جاتا لیکن میں خواتین کیلئے لڑتی رہوں گی۔ میچ کے اختتام پر امپائر نے جاپانی کھلاڑی ناؤمی اوساکا کی کامیابی کا اعلان کیا تو سرینا ولیمز آنسوؤں سے رونے لگیں۔ 23 مرتبہ گرینڈ سلام جیتنے والی سرینا نے کہا کہ اس بات نے ان کا ‘دماغ گھما کر رکھ دیا لیکن میں خواتین کیلئے اپنی لڑائی جاری رکھوں گی اور اپنی برابری کیلئے لڑتی رہوں گی۔’ انھوں نے کہا ‘مجھے اس بات کا احساس ہے کہ مجھے آنے والے حساس افراد کیلئے مثال قائم کرنی ہے جو اپنے جذبات کا اظہار کرنا چاہتی ہیں اور ایک مضبوط خاتون کھلاڑی بننا چاہتی ہیں۔ ‘انھیں آج کی وجہ سے ایسا کرنیکی اجازت ہوگی۔ شاید یہ میرے لیے سازگار ثابت نہ ہوا ہو لیکن آنے والے دوسرے فرد کیلئے ضرور ہوگا۔’ انہوں نے کہاکہ انکو اپنی اس شکست پر بہت مایوسی اور افسوس ہوا جس کو وہ اپنی زندگی میں کبھی فراموش نہیں کرسکیں گی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ