جنسی ہراسگی میں ملوث لیکچرار اور وی سی کو فوری معطل کیا جائے

25

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) سماجی تنظیم جمالی فاؤنڈیشن اور سول سوسائٹی کی جانب سے بینظیر بھٹو یونیورسٹی میں زیر تعلیم طلبہ فرزانہ جمالی کو جنسی ہراساں کرنے والے معاملے کیخلاف حیدر آباد پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا جس کی قیادت کرتے ہوئے سرفراز جمالی، تنویر جمالی اور شفیق احمد جمالی نے بتایا کہ سندھ میں لڑکیوں کی تعلیم پہلے ہی نہ ہونے کے برابر ہے اور تعلیمی اداروں میں طالبات کو جنسی ہراساں کرنے کے واقعات لڑکیوں کو تعلیم سے دور رکھنے کی سازش ہے۔ انہوں نے کہا کہ بے نظیر بھٹو یونیورسٹی میں شعبہ انگلش میں زیر تعلیم طلبہ فرزانہ جمالی کو لیکچرار عامر خٹک نے جنسی ہراساں کرنے کی کوشش کی ہے، جس کی ہم سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور چیف جسٹس آف پاکستان، وزیر اعظم عمران خان اور اعلیٰ حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ بینظیر بھٹو یونیورسٹی کے لیکچرار عامر خٹک اور وی سی کو فوری طور پر معطل کرکے طلبہ فرزانہ جمالی کو تحفظ اور انصاف فراہم کیا جائے۔ حیدر آباد کے علاقے کچہ قلعہ کے رہائشی محمد عمران نے بااثر افراد کی زیادتیوں کیخلاف حیدر آباد پریس کلب کے سامنے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ میرے پڑوسی طارق قریشی، حامد قریشی اور خالد قریشی سمیت دیگر طریقوں سے پریشان کررہے ہیں جبکہ چند روز قبل مذکورہ افراد نے میرے گھر کا دروازہ توڑ کر مجھے نقصان پہنچایا ہے اور مجھے میرے گھر کی تعمیرات کا کام بھی کرنے نہیں دیا جارہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس حوالے سے ایس ایس پی حیدر آباد سمیت عدالت میں بھی درخواست دی گئی ہے لیکن بااثر افراد کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔ انہوں نے ارباب اختیار سے مطالبہ کیا کہ معاملے کا نوٹس لے کر بااثر افراد کیخلاف کارروائی کرکے مجھے تحفظ و انصاف فراہم کیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ