پاکستان یونین ناروے کے زیراہتمام جشن آزادی پاکستان کی شاندار تقریب نارویجن وزیرثقافت مس گراندے،بیرسٹرقادری، ہائی شیرف مانچسٹرڈاکٹرروبینہ، میئر لورنسکگ برگھائیم، چیئرمین یونین قمراقبال و ویلفیئراتاشی خالد محمود و دیگرکا خطاب

72

پاکستان کے یوم آزادی کے موقع پر پاکستان یونین ناروے کے زیراہتمام دارالحکومت اوسلو کے مضافاتی شہر لورنسکگ میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد ہوا۔ تقریب کا باقائدہ آغاز تلاوت قرآن کریم سے کیا گیا جس کی سعادت محمد اسجد نے حاصل کی جبکہ پاکستان کے نامور لوک گلوکار و نعت خوان طاہرمحمود نیئر نے حمد باری تعالیٰ پیش کی۔ تقریب میں نقابت کے فرائض ادبی شخصیت شاہ رخ سہیل اور نارویجن پاکستانی پریزنٹر مس ماریہ خان نے انجام دیئے۔ تقریب میں پاکستان اور ناروے کے قومی ترانے بھی پیش کئے گئے ۔تقریب کے دوران بہت بڑی تعداد میں لوگ موجود تھے۔ تقریب کے میزبان اور پاکستان یونین ناروے کے چیئرمین چوہدری قمر اقبال نے پروگرام میں شریک تمام مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور خاص کر بیرون ممالک سے آئے ہوئے مہمانان گرامی کوئین کونسل بیرسٹر صبغت اللہ قادری، مانچسٹر برطانیہ کی پاکستانی نژاد ہائی شیرف ڈاکٹر روبینہ شاہ، پاکستان یونین نارو ے کے پاکستان میں قانونی مشیر عظمت فاروق، لندن دھنک کی چیف ایڈیٹر کوثر منور شرقپوری کا اس پروگرام میں شرکت کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ ناروے کی وزیرثقافت تھرینے شائی گراندے ، میئر آف لورنسکوگ راگنیلد برگ ھائیم اور وینسترے پارٹی کے رکن پارلیمنٹ عابدقیوم راجہ ، ہورے پارٹی کے رکن پارلیمنٹ مدثر کپور اور کیمونٹی ویلفیئراتاشی سفارتخانہ پاکستان خالد محمودنے بھی پروگرام میں خصوصی شرکت کی۔ چوہدری قمر اقبال نے تمام پاکستانیوں کو جشن آزادی کی مبارکباد بھی پیش کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے بزرگوں نے پاکستان کو انتھک جدوجہد اور بے شمارے قربانیوں کے بعد حاصل کیا ہے جس کی حفاظت کرنا ہمارا فرض ہے۔پاکستان یونین ناروے سے متعلق چوہدری قمر اقبال کا کہنا تھا کہ یہ ایک غیر سرکاری و سماجی وثقافتی تنظیم ہے جو کسی بھی حکومت یا اداروے سے کسی قسم کی بھی مالی امداد وصول نہیں کرتی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان یونین ناروے کو کامیابی کے ساتھ چلانا کسی چیلنج سے کم نہیں ہے لیکن اللہ کے فضل سے اور دوستوں کے تعاون سے ہم نے اس تنظیم کو کامیاب بنایا۔قمراقبال نے اعلان کیا کہ پاکستان یونین ناروے پاکستان یونین ناروے پاکستان میں اپنی سماجی خدمات کو مزید وسعت دینے کے لیے ’’ایثار‘‘ کے نام سے ایک ذیلی تنظیم قائم کرنے کا اعلان کرتی ہے۔
مانچسٹر برطانیہ کی پاکستانی نژاد ہائی شیرف ڈاکٹر روبینہ شاہ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئر مین پاکستان یونین ناروے چوہدری قمر اقبال کا شکریہ ادا کیا اور انہیں تقریب کے شاندار انعقاد پر مبارکباد پیش کی۔ ڈاکٹر روبینہ شاہ کا کہنا تھا کہ ان کے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ انہیں ناروے میں جشن آزادی پاکستان کے موقع پر ایوارڈ دیا گیا۔ انھوں نے بتایاکہ وہ پہلی پاکستانی نژاد خاتون ہیں، جنہیں ملکہ برطانیہ الزابتھ نے گریٹر مانچسٹر کا ہائی شیرف بنایا ہے اور یہ عہدہ ملنا ان کیلئے بہت بڑا اعزاز ہے۔کوئین کونسل برطانیہ کے ممبر اورکہنہ مشق ماہر قانون بیرسٹر صبغت اللہ قادری نے بھی تقریب سے ایک پر جوش خطاب کیا جس نے تمام حاضرین محفل کے دل جیت لیے۔ اپنے خطاب میں بیرسٹر صبغت اللہ نے کہا کہ پاکستان کو بنے 71 برس گزر گئے ہیں لیکن بدقسمتی سے قائداعظم کے سوا ء ہمارے ملک کو اچھی قیادت نصیب نہ ہوسکی۔ بنگلہ دیش جو کہ پہلے مشرقی پاکستان تھا ہم سے علیحدہ ہوگیا اور ہمارے بچوں کو اس کے بارے میں پتہ ہی نہیں۔ہماری بدقسمتی دیکھیں کہ ہمارے سکول نصاب میں بھی ایسٹ پاکستان کا کوئی ذکر نہیں ہے۔ ہماری نئی نسل کو پاکستان کی تاریخ بھی صحیح طرح نہیں پڑھائی جاتی ہے. انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کو مساوات اور برابری قائم کرنے کے لیے بنایا گیا۔ پاکستان کو اس لیے بنا گیا تھا تاکہ تمام لوگوں(خواہ وہ کسی بھی مذہب سے تعلق رکھتے ہوں)کو مساوی حقوق فراہم کیے جاسکیں۔ بیرسٹر صبغت اللہ قادری کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کے حالیہ انتخابات کے نتیجے میں امید کی ایک کرن نظر پیدا ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرا تعلق کسی خاص جماعت سے نہیں ہے۔مسلم لیگ نواز اور پیپلز پارٹی گذشتہ تین دھائیوں سے ملک میں حکومت بناتی آئی ہیں لیکن انہوں نے ہمارے سسٹم کو درست کرنے کی بجائے مزید خراب کیا ہے.ناروے کی وزیرثقافت تھرینے شائی گراندے نے بھی تقریب سے خطاب کیا اور نارویجن پاکستانیوں کوپاکستان کی قومی زبان میں جشن آزادی کی مبارکباد پیش کی۔ وزیرثقافت نے کہا کہ پاکستانی گزشتہ 50 برس سے ناروے میں رہ رہے ہیں اور ناروے کی ترقی میں اہم کردار ادا کررہے ہیں۔ پاکستان پر بات کرتے ہوئے تھرینے گریندے نے کہا کہ پاکستانی سابق کرکٹر عمران خان پاکستان کے نئے وزیراعظم منتخب ہوئے ہیں جو پاکستان کے لیے خوش آئند بات ہے.اپنے خطاب کے دوران نارویجن وزیرثقافت نے پاکستان کے قومی شاعر علامہ اقبال کے اشعار‘‘خودی کو کر بلند اتنا کہ ہر تقدیر سے پہلے’’کو بھی شامل کیا جس پر پاکستانیوں کی جانب سے انہیں خوب سراہا گیا۔انھوں نے قائداعظم محمد علی جناح کی گیارہ اگست کی تقریر کا بھی حوالہ دیا جس میں لوگوں کے ساتھ مساوی سلوک کا ذکر کیا گیا ہے۔ اپنے خطاب کے اختتام پروزیرثقافت نے پاکستان، ناروے زندہ باد کا نعرہ بھی بلند کیا۔ تقریب سے لورنسکگ کی میئر آف لورنسکوگ راگنیلد برگ ھائیم اور وینسترے پارٹی کے رکن پارلیمنٹ عابدقیوم راجہ ، ہورے پارٹی کے رکن پارلیمنٹ مدثر کپور اور کیمونٹی ویلفیئراتاشی سفارتخانہ پاکستان خالد محمودنے خطاب کیا۔
کمیونٹی ویلفیئراتاشی خالد محمود نے کہاکہ انہیں اس تقریب میں شرکت کرکے بہت خوشی ہوئی ہے۔ اس بھرپور پروگرام کے انعقاد پر چوہدری قمراقبال کی قیادت میں پاکستان یونین ناروے مبارکباد کی مستحق ہے۔انھوں نے نارویجن پاکستانی کمیونٹی کو جشن آزادی پاکستان کی مبارکباد دی۔ انھوں نے کہاکہ سفارتخانہ پاکستان نارویجن پاکستانی کمیونٹی کے پاکستان سے متعلق مسائل کے حل کے لیے پوری طرح کوشاں ہے۔ پاکستان کے بارے میں انھوں نے کہاکہ پاکستان بے شمار قربانیاں دے کر حاصل کیا گیااورقائداعظم محمد علی جناح کی قیادت میں برصغیر کے مسلمانوں نے پاکستان کی صورت میں ایک الگ آزاد وطن قائم کیا۔
تقریب کے دوران اپنے اپنے شعبوں میں نمایاں خدمات انجام دینے والی یورپ کے مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے تین خواتین جن میں گریٹر مانچسٹر برطانیہ سے تعلق رکھنے والی خاتون ڈاکٹر روبینہ شاہ، چیف ایڈیٹر لندن دھنک سیدہ کوثر منور شرقپوری اور چیف ایڈیٹر اورسیز کمیونٹی پوسٹ رقیہ کوثرشامل ہیں کو پاکستان ناروے یونین کی جانب سے اعزازی شیلڈ سے بھی نوازا گیا۔ تقریب کے اختتام پر چوہدری قمر اقبال نے جشن آزادی کے اس پروگرام کو کامیاب بنانے پر پاکستان یونین ناروے کی پوری ٹیم کا شکریہ ادا کیا جبکہ کیمونٹی ویلفیئراتاشی سفارتخانہ پاکستان خالد محمود ، لیگل ایڈوائیزر آف پاکستان یونین نارو ے عظمت فاروق ایڈوکیٹ ، سینئر جرنلسٹ اور رسرچ سکالرسید سبطین شاہ اور سکون آرگنائیزیشن کے چیئرمین شاہد جمیل کو پھولوں کا گلدستہ بھی پیش کیا۔ تقریب کے معزز مہمانوں کے ساتھ پاکستان یونین ناروے کی پوری ٹیم کا گروپ فوٹو بھی بنوایاگیا۔ تقریب میں شرکاء کی تفریح کے لیے پاکستان کی مشہور گلوکارہ شازیہ منظور کو خاص طور پر مدعو کیا گیا تھا جنہوں نے تقریب کے دوسرے مرحلے میں لائیو پرفارم کیا اور شرکاء کی طرف سے خوب داد وصول کی۔ انھوں نے ملی نغمے اور صوفیانہ کلام بھی پیش کیا۔پروگرام کے اس مرحلے کے منتظم پاکستان کے متحرک ایونٹس آرگنائزرمحمد عباس فلکی تھے۔ اس دوران ہال کچھاکچھ بھرا ہوا تھا۔ شازیہ منظور کے علاوہ معروف لوک گلوکار طاہر محمود نیئر نے مختلف علاقائی زبانوں میں گیت پیش کئے اس موقع پر سیدہ کوثر منور شرقپوری نے نمائندہ جسارت سے گفتگو کرتے ھوئے بتایا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی صحافیوں کو ان کے خدمات پر اس طرح کے تقریبات کافی حوصلہ افزاء ھوتے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم پاکستانی دنیابھر میں پاکستان کے معیشیت میں زرمبادلہ بھیج کر اپنا کردار ادا کررہے ھے اوورسیز پاکستانیوں ہمشیہ پاکستان کا نام بلندکیا ھے جشن ازادی پورمسرت موقع پرپاکستان یونین ناروے کا ایوارڈز تقریب عزت افزائی کاتہہ دل سے مشکورہیے اور امید کرتے ھے یورپ سمیت دیگر ممالک بھی پاکستانی صحافیوں اور کالم نگاروں کے خدمات کو سرہانے کا موقع ضائع نہیں کرینگے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ